بڑھتی ہوئی آبادی کو کنٹرول کرنے کے لئےآگہی مہم چلانے کی ضرورت ہے،ڈی سی

 Population Rahim yar khan


ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے کہا ہے کہ بڑھتی ہوئی آبادی کو کنٹرول کرنے اور فیملی پلاننگ کے اہداف کو حاصل کرنے کے لئے ضلع بھر میں مربوط اور منظم آگہی مہم چلانے کی ضرورت ہے تاکہ عوام کی توجہ اس اہم مسئلہ کی جانب مبذول کراتے ہوئے مطلوبہ اہداف حاصل کئے جا سکیں۔

اسلامی تعلیمات کے مطابق ماں اور بچے کی صحت کے لئے2تاڈھائی سال تک بچے کو ماں کا دودھ پلانا انتہائی ضروری اقدام ہے۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی رابطہ کمیٹی برائے بہبود آبادی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔
اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین، ڈسٹرکٹ آفیسر بہبود آبادی شاہد الیاس، سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی ملک مختار حسین، ڈسٹرکٹ منیجر پی ایچ ایف ایم سی محمد ذیشان، میڈم ثمینہ اشرف، ڈی ایچ او ڈاکٹر سخاوت رندھاوا، ڈاکٹر زبیر احمد، ڈی او سوشل ویلفیئر چوہدیر صفدر حسین وڑائچ سمیت دیگر تعاون کرنے والے اداروں اور این جی اوز کے نمائندگان موجود تھے۔
ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل بڑھتی ہوئی آبادی سنگین مسئلہ ہے جس کے روک تھام کے لئے محکمہ بہبود آبادی دیگر اداروں کے ساتھ مل کر پلاننگ کے تحت کام کرے۔
انہوں نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین کو ضلعی فوکل پرسن نامزد کرتے ہوئے ہدایت کی کہ وہ تمام اداروں کا اجلاس طلب کرکے مشترکہ حکمت عملی مرتب کریں تاکہ ضلع کویونین کونسل سطح پر فوکس کیا جاسکے اور ایسے ایریا میں بھی آگہی پہنچائی جا سکے جو تاحال نظر انداز ہو رہے ہیں۔انہوں نے سی ای ا وایجوکیشن اتھارٹی کو ہدایت کی کہ وہ سکولوں میں بڑھتی ہوئی آبادی کے مسائل ونقصانات بارے اساتذہ و بچوں میں آگہی کے لئے تحریری و تقریری مقابلہ جات و سیمینار کا انعقاد کرائیں جبکہ محکمہ بہبود آبادی پبلک مقامات اراضی ریکارڈ سنٹرز، نادرا آفس، ریلوے اسٹیشن، ڈومیسائل برانچ سمیت تمام سرکاری ہسپتالوں میں محکمہ بہبو دآبادی کے کاؤنٹرز قائم ہوں۔ڈپٹی کمشنر نے ضلع بھر میں ہونے والے تفریحی و ثقافتی پروگرامز کی اجازت بھی محکمہ بہبود آبادی کے سٹالز سے مشروط کر دی۔انہوں نے کہا کہ یہ ایک قومی مہم ہے جس کے لئے تمام محکموں کے افسران ایک ٹیم بن کر کام کریں گے ۔
انہوں نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو) کی سربراہی میں ایک ورکنگ گروپ بھی تشکیل دیا جس میں محکمہ بہبود آبادی کے ساتھ کام کرنے والے تمام اداروں کے افسران شامل ہیں جو بڑھتی ہوئی آبادی کو کنٹرول میں رکھنے کے لئے اپنا مشترکہ پلان مرتب کریں گے۔ڈپٹی کمشنر نے ہدایت کی کہ محکمہ بہبو دآبادی اپنی موبائل ٹیموں اور یونٹس کو متحرک کرے وہ فیلڈمیں نظر آنے چاہیے۔قبل ازیں ڈسٹرکٹ آفیسر بہبود آبادی نے محکمہ بہبود آبادی کے وسائل اور کام تعاون کرنے والے اداروں واین جی اوز کے ہمراہ کام کے طریقہ کار بارے بریفنگ دی۔ڈاکٹر سخاوت رندھاوا نے بتایا کہ بچوں کو اپنا دودھ پلانے والی ماؤں میں بریسٹ کینسر کے 90فیصد چانس ختم ہو جاتے ہیں یہ ایک قدرتی حفاظت ہے جو اللہ تعالیٰ نے خواتین کودی ہے۔

 

 Population Rahim yar khan

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »