fbpx

رحیم یارخان پی ٹی آئی رہنماء محنت کش کی اراضی پرقابض ہوگیا،

رحیم یارخان پی ٹی آئی رہنماء محنت کش کی اراضی پرقابض ہوگیا‘

متاثرین کوزمین کاقبضہ دینے کی بجائے قتل سمیت سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے لگا‘ متاثرین حصول انصاف کے لیے دربدرکی ٹھوکریں کھانے پرمجبور‘ اعلی حکام سے فوری نوٹس لے کرکارروائی کامطالبہ۔

سنجرپورکی رہائشی انعم حبیب نے اپنے والداظہرحبیب‘ والدہ اورراناخالدمحمودکے ہمراہ ڈسٹرکٹ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایاکہ انہوں نے پی ٹی آئی رہنماء رانانبی احمدکومستاجری پر7ایکڑ2کنال اراضی دے رکھی تھی اس دوران انہوں نے رحیم یارخان شہرمیں مکان خریدکیااوررقم کی ادائیگی کے لیے اراضی فروخت کرناچاہی اوررانانبی احمدکومتعددبارزمین خریدکرنے کاکہالیکن اس نے صاف انکار کردیاجس پرانہوں نے اراضی راناخالدمحمودکوفروخت کردی اوررجسٹری کروادی جس میں 30کینال اراضی کی رقم وصول کرلی جبکہ دیگراراضی کی رقم بقایاہے‘ انہوں نے کہاکہ وہ راناخالدکوقبضہ دلانے کے لیے متعددباررانانبی احمدکی منت سماجت کرچکے ہیں لیکن وہ قبضہ دینے کی بجائے انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہاہے‘ انہوں نے کہاکہ رانانبی احمداس سے پہلے بھی علاقہ کے مختلف لوگوں کی اراضی پرقبضے کرچکاہے اوروہ انصاف کے حصول کے لیے دربدرکی ٹھوکریں کھانے پرمجبور ہے‘ انہوں نے آر پی اوبہاولپور‘ ڈی پی اورحیم یارخان سمیت دیگرحکام سے فوری نوٹس لے کرانصاف فراہم کرنے کامطالبہ کیاہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close