fbpx

لیاقت پور بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ میں 2کروڑ روپے کے گھپلے،

لیاقت پور (تحصیل رپورٹر)لیاقت پور بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ میں 2کروڑ روپے کے گھپلے،ایکسین۔SDOشہباز،سب انجینئرز  ناصر اور معظم ملوث،تحقیقاتی ادارے خاموش،اینٹیں دو نمبر استعمال،مصالحہ (ریشو) اسٹیمیٹ کے برعکس، سیمنٹ کی جگہ ریت کا آزادانہ استعمال،ٹھیکیداروں سے بلڈنگ آفیسران نے پارٹنر شپ اختیار کررکھی تھی،پہلے والے کاموں پر پلستر کرکے نیا شو کردیا گیا،شہباز،ناصر اور معظم مالامال،سرکار کو 2لاکھ روپے کا جھٹکا،بعض کام ٹھیکیدار ادھورا چھوڑ کر فرار ہو گئے،پیمنٹ مکمل لے لی،ایجوکیشن آفیسران نے بھی اپناحصہ لیکر اوکے کی رپورٹ دے دی،شہری نے تحقیقاتی اداروں سے رجوع کرلیا،فوری کاروائی کا مطالبہ تفصیل کے مطابق سابقہ حکومت کے دور میں ڈسٹرکٹ بلڈنگ رحیم یار خان  کے سب ڈویژن لیاقت پور کو ترقیاتی منصوبہ جات سال 2017-18 کیلئے کروڑوں روپے کے فنڈ ملے جس کے ٹینڈر سال2017کو ہوئے تھے آفیسران ڈسٹرکٹ بلڈنگ رحیم یار خان نے درج ذیل منصوبہ جات ری کنسٹریکشن بلڈنگ گورنمنٹ بوائز پرائمری سکول چک 28/A،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ پرائمری سکول چک 129/NP،ری کنسٹریکشن سکول بلڈنگ گورنمنٹ بوائز پرائمری سکول کوٹلہ مبارک،ری کنسٹریکشن سکول بلڈنگ گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول چک 15/A،کنسٹریکشن آف بونڈری وال اینڈ گیٹ پلرز ماڈل ویلج سکول لال شاہ،کنسٹریکشن آف بونڈری وال اینڈ گیٹ پلرزگورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول،کنسٹریکشن آف بونڈری وال اینڈ گیٹ پلرزگورنمنٹ پرائمری سکول واحد امیر،کنسٹریکشن آف بونڈری وال اینڈ گیٹ پلرزٹویلٹ بلاک گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول حیدر نگر،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ پرائمری سکول قادر آباد،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ بوائزپرائمری سکول چک 259/P،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ مڈل سکول مظہر خان،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ مڈل سکول جہانگیر چینل،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ بوائز ایلمنٹری سکول دھارے اوٹ،ری کنسٹریکشن گورنمنٹ بوائز ہائی سکول عمر وڈہ دشتی سمیت دیگر منصوبوں میں گھپلے کرتے ہوئے دو نمبر اینٹوں سیمنٹ کی جگہ ریت کا آزادانہ استعمال کرتے ہوئے تمام کام اسٹیمیٹ کے برعکس کیا محکمہ بلڈنگ کے سینئر آفیسران  ایگزیکٹو انجینئر رحیم یار خان،SDOلیاقت پور شہباز،سب انجینئرز ناصر اور معظم نے ٹھوس منصوبہ بندی کرتے ہوئے سرکاری خزانے کو 2کروڑ روپے کا جھٹکا دے دیا مذکورہ آفیسران نے ٹھیکیداروں سے پارٹنر شپ اختیار کر لی تھی کیونکہ کمیشن تو صرف دو سے تین فیصد ملتا ہے اس لیے پارٹنر شپ کے ذریعے حکومت کو دو کروڑ روپے کا نقصان پہنچایا اینٹیں دو نمبر سے بھی بدتر استعمال کی گئیں اور بعض سکولوں میں پرانی عمارتوں اور مختلف جگہوں پر اوپر پلستر کرکے نیا شو کیا گیا اور پیسے نئی عمارت و جگہ کے حساب سے لیے گئےSDOشہباز کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ وہ انتہائی کرپٹ SDOہے ٹھیکیداروں سے پہلے ہی مک مکا کرلیتا ہے بعد میں انہیں ورک ارڈر دے دیتا ہے اور کوئی ٹھیکیدار چوں چراں کرے تو اس کے ورک آرڈر روک لیتا ہے تحصیل بھر کے کسی ایک سکول میں بھی کوئلے کی اینٹ استعمال نہیں کی گئی جبکہ بل کوئلے کی اینٹ کا لیا گیاچیف انجینئر اور SEبلڈنگ کو اس طرف توجہ دلائی گئی تھی لیکن وہ  اپنے کرپٹ آفیسران کو تحفظ فراہم کرتے ہوئے کاروائی نہیں کر رہے شہری نے چیئرمین قومی احتساب بیورو نیب اور ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب سے مطالبہ کیا کہ بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ سے تمام ریکارڈ قبضے میں لیکر تحقیقات کرائی جائے اور لوٹی گئی رقم ایکسین رحیم یارخان،SDOشہباز،سب انجینئرز ناصر اور معظم سے ریکور کی جائے جبکہ اس سلسلے میں SDOشہباز سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ میں نے بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کا چارج چھوڑ دیا ہے بلڈنگ کا چارج مختار بلوچ کے پاس ہے جبکہ ناصر اور معظم نے بتا یا کہ ہم نے تمام کام اسٹیمٹ کے مطابق کرایا ہے۔ 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close