لیاقت پور کینال سرکٹ ہائوس میں منعقدہ کھلی کچہری میں عوامی مسائل سنے گئے

ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل اور ڈی پی او عمر سلامت نے تحصیل لیاقت پور کینال سرکٹ ہاؤس میں منعقدہ کھلی کچہری میں عوامی مسائل سنے، سائلین کی جانب سے جائیدادوں اور زمینوں پر قبضے سمیت متعدد محکموں میں زیر التوا ء مسائل بابت درخواستیں پیش کی گئیں۔
ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او نے تمام پیش ہونے والے سائلین کی شکایات کو بغور سنا اور موقع پر ہی متعلقہ افسران کو میرٹ کے مطابق ان کی شکایات دور کرنے اور داد رسی کے احکامات جاری کئے۔کھلی کچہری میں ایم پی اے چوہدری مسعود احمد، اسسٹنٹ کمشنر لیاقت پور آصف اقبال، ایس ڈی پی او لیاقت پور دستگیر لنگاہ سمیت تمام محکموں کے ضلعی و تحصیل افسران موجود تھے۔
ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ محکموں کو سائلین کی جانب سے پیش کی جانے والے درخواستوں و مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ کھلی کچہری کو بامقصد اور با معنی بناتے ہوئے سائلین کو میرٹ پر انصاف فراہم کیا جائے گا۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ کھلی کچہریوں کے باقاعدگی سے انعقاد کے نتیجے میں عوام کے ضلعی انتظامیہ پر اعتماد میں اضافہ ہوا ہے اور مسائل میں کمی واقع ہوئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کھلی کچہریوں کا ہفتہ وار انعقاد موجودہ حکومت کے عوام دوست ترقیاتی پروگرام کا حصہ ہے ۔انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ وہ عوامی خدمت کے جذبے سے سرشار ہو کر اپنے فرائض ادا کریں۔
ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عمرسلامت نے کہا کہ حکومت پنجاب کے ویژن کے مطابق ڈی پی او آفس کے دروازے تمام سائلین کے لئے کھلے ہیں ، کھلی کچہریوں کا مقصد عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر ان کی دہلیز پر جا کر حل کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ مقدمات کی تفتیش ہر صورت میرٹ پر کی جائیگی اور اس سلسلہ میں کسی دباؤ کو خاطر میں نہیں لایا جائے گا، اپنے اختیارات سے تجاوز کرنے والے پولیس افسر اور اہلکار کسی رعایت کے مستحق نہیں، انکے خلاف سخت محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ انصاف کا حصول ہر شہری کا حق ہے اور جو پولیس افسر یا اہلکار شہریوں کو انصاف فراہم کرنے میں رکاوٹ بنے گا اس کی محکمہ میں کوئی جگہ نہیں۔قبل ازیں ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل اور ڈی پی او عمر سلامت نے تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال لیاقت پور میں پولیس سہولت سنٹر کا افتتاح بزرگ شہری سے کرایا ۔اس موقع پر ڈی پی او عمر سلامت نے بتایا کہ تمام تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتالوں میں پولیس سہولت سنٹر قائم کئے جا رہے ہیں تاکہ لڑائی جھگڑوں سمیت کسی بھی حادثہ میں زخمی ہونے والے افراد کی موقع پر ہی ایم ایل سی رپورٹ جاری کی جا سکے اور زخمیوں کو تھانے نہ جانا پڑے۔
انہوں نے کہا کہ سہولت سنٹر چوبیس گھنٹے فنکشنل رہیں گے۔ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے ہسپتال کا دورہ کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر کو ہدایت کی کہ وہ ہسپتال ایمرجنسی میں100فیصد ادویات کی دستیابی یقینی بنائیں اور داخل مریض کو ایمرجنسی میں ادویات باہر سے نہ منگوانا پڑیں۔انہوں نے ایم ایس ہسپتال کو ہدایت کی کہ وہ ایمرجنسی کے باہر آویزاں کریں گے ہسپتال ایمرجنسی میں تمام ادویات دستیاب اور مفت فراہم کی جاتی ہیں باہر سے ادویات منگوانے کی صورت میں سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ڈپٹی کمشنر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال میں سپیشلسٹ ڈاکٹرز کے دن مقرر کئے جا رہے ہیں جبکہ ڈائیلائسز سنٹر کے قیام کے لئے بھی حکومت کو سکیم بنا کر بھیجی جا چکی ہے۔انہوں نے کہا کہ جلد آئی سی یو وارڈ ٹی ایچ کیو ہسپتال میں فنکشنل ہو جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »