fbpx
جرائم وحادثاترحیم یارخانصادق آباد

مسلم لیگ ن کے جنرل کونسلر چراغ بھٹی کے بیٹے کی گرفتاری کا معاملہ سنگین ہوگیا

مسلم لیگ ن کے جنرل کونسلر چراغ بھٹی کے بیٹے کی گرفتاری کا معاملہ سنگین ہوگیا‘ سی سی ٹی وی کیمروں نے پولیس کی جانب سے ہراساں کرنے کا بھانڈہ پھوڑ دیا‘گرفتاری کیلئے چھاپہ بھی بغیر وارنٹ بغیر لیڈی پولیس کیا گیا ‘ پولیس گھر میں داخل ہوئی خواتین کو بھی ہراساں کیا گیا ‘ بلدیہ صادق آباد نے معاملہ پر ہنگامی اجلاس آج طلب کرلیا‘ تفصیل کے مطابق پولیس تھانہ کوٹ سبزل نے 3فروری کو ایک مقدمہ درج کیا جس میں بتایا گیا کہ ملزم عمران بھٹی کو سندھ سے پنجاب تین کلو چرس سمگل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کیا گیا ہے جبکہ اس کے برعکس لیگی کونسلر سیٹھ چراغ بھٹی کے بیٹے عمران کو 29جنوری کو پولیس کی بھاری نفری نے نماز سے واپسی پر گھر کے باہر سے گرفتار کیا جس کی سی سی ٹی وی ویڈیو گھروالوں نے میڈیا کو دے دی جس میں واضح دیکھا جاسکتا ہے کہ پولیس کی بھاری نفری پہلے سیٹھ چراغ بھٹی کے گھر گئی پھر عمران بھٹی کے گھر میں پولیس داخل ہوئی اس وقت پولیس کے پاس کوئی وارنٹ یا لیڈی کانسٹیبل موجود نہیں پولیس ملازمین نے خواتین کو ہراساں بھی کیا جبکہ عمران بھٹی کو گلی سے گرفتار کرکے بائیک پر تھانہ سٹی شفٹ کردیا گیا جہاں سے پولیس نے اسے چار روز اپنی غیر قانونی حراست میں رکھنے کے بعد تین فروری کو اس پر منیشات سمگل کرنے کا مقدمہ درج کرکے گرفتاری ظاہر کردی اور جیل منتقل کردیا لیگی کونسلر سیٹھ چراغ بھٹی نے الزام لگایا کہ پولیس اسے انتقامی کاروائی کا نشانہ بنارہی ہے مسلم لیگ ن کے امیدوار کو سپورٹ کرنے پر ہمیں ہراساں کیا جارہا ہے گھر کے باہر سے گرفتار کیے گئے میرے بیٹے کو چار روز بعد منیشات کا سمگلر بنا کر اس پر تین کلو چرس ڈال دی گئی جو کہ سراسر ظلم ہے انہوں نے چیف جسٹس آف سپریم کورٹ پاکستان اور وزیر اعظم سے مدد کی اپیل کی ہے دوسری جانب سی سی ٹی وی ویڈیو سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر ہل چل برپا ہے پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگائے جارہے ہیں کہ کس طرح ایک شہری کو گھر سے بغیر کچھ برآمد کیے بغیر غیر قانونی حراست میں رکھتے ہوئے منشیات کا سمگلر بناد یا گیا جبکہ چئیرمین بلدیہ چوہدری شفیق پپا نے صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے میونسپل کمیٹی کا ہنگامی اجلاس آج دن ساڑھے گیارہ بجے طلب کرلیا ہے

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close