fbpx

ھمارے سگے اور سوتیلے شہید۔

زیر نظر تصویر میں دو کہانیاں ھیں۔ دو ماؤں کی کہانیاں، دونوں نے اپنے لخت جگر ملک کی آن بان اور محکمہ پولیس کی شان کے لئے قربان کئے۔ ان تصاویر میں ایک شہید ڈی آئی جی کیپٹن مبین کی والدہ ہیں جو کہ لاھور میں ایک نئے بننے والے تھانہ کی عمارت کا افتتاح کر رہی ہیں جبکہ دوسری تصویر میں کراچی میں چینی کونصل خانے پر ھونے والے حملہ کو ناکام بنا کر اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے والے جوان کی والدہ ہیں جنکو انکے شہید بیٹے اور سپروائزری افسران کو ایوارڈز سے نوازے جانے کی تقریب کے دوران زمین ہر بٹھا کر کھانا کھلایا گیا۔ یہ تصویر ھمارے معاشرے کے دوہرے معیار اور مادیت کے ہاتھوں اخلاقی گراوٹ کے شکار ھمارے معاشرے کا بھیانک چہرہ ہیں۔ برطانوی سامراج سے آزادی کے بعد ھمارا ملک کس طرح مقامی اشرافیہ اور بدکردار افسر شاہی کے ہاتھوں یرغمال بن چکا ھے یہ تصویر اہل عقل و خرد اور ملک کے لئے درد دل رکھنے والوں کی خاموشی پر وہ طمانچہ ھے جس کی بازگشت روح تک کو جھنجھوڑ ڈالے۔ آخر کب تک اور کہاں تک یہ طبقاتی تقسیم برداشت کی جاۓ گی؟؟

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close