ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفس (زنانہ) میں ہونے والا آڈٹ من پسند خواتین اے ای اوز کے سپرد کردیا گیا

رحیم یارخان : لیاقت پور ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفس (زنانہ) میں ہونے والا آڈٹ من پسند خواتین اے ای اوز کے سپرد کردیا گیا آڈٹ آفیسر ملک ارشد نے چند اے ای او زنیرا،سعدیہ اکرم،سناودیگر کو تعینات کردیا

کہ جو ٹیچر رشوت دے تحفہ تحائف دے اسے پروٹوکول اور کوئی اعتراض نہ لگایا جائے جو ٹیچر انکی غلامی میں نہ آئے انکو رشوت نہ دے انکی ڈیمانڈیں پوری نہ کرے اسکی تذلیل کرکے اس کے ریکارڈ کو یکسر مسترد کرکے اس پر اعتراض لگایا جارہا ہے

ذرائع کے مطابق ملک ارشد سابقہ ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر(زنانہ) لیاقت پور عذرانسرین کی کروڑوں روپے کی کرپشن کو چند لاکھوں میں بدلنے کے لیے ایک لاکھ روپے رشوت لے چکا ہے اور سکولوں کے آڈٹ کے لیے علاوہ پیسے لے رہا ہے اور رشوت لینے کے لیے اے ای اوز کو استعمال کررہا ہے

جوٹیچر اے ای اوز اور ملک ارشد کو گھاس نہ ڈالے اس پر عرصہ حیات تنگ جبکہ جنہوں نے لاکھوں روپے کی کرپشن کی ہے اور اے ای اوز کے ذریعے ملک ارشد کی مٹھی گرم کردی ہے

اسکو ریکارڈ میں کلیئر قرار دیا جارہا ہے معلمات نے اپنا نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا کہ ڈپٹی آفس میں ہونے والا آڈٹ کرپشن کی نذر ہوگیا ہے اور ملک ارشد اور اسکے ساتھ بیٹھنے والی اے ای اوزخاص طور پر سعدیہ اکرم انتہائی بدتمیزی سے پیش آرہی تھیں انسانیت نام کی کوئی چیز نہیں معلمات نے آڈیٹر جنرل آف پاکستان سے مطالبہ کیا کہ ملک ارشد کے خلاف فوری کاروائی کرتے ہوئے انکو آڈٹ کرنے سے روک دیا جائے اور ایماندار آڈٹ آفیسرکو مقرر کیا جائے جبکہ آڈٹ آفیسر ملک ارشد، اے ای اوز سعدیہ اکرم،زنیرا،سنا نے ان الزامات کو غلط قرار دیا اور کہا صیح و شفاف آڈٹ ہورہا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close