حکمرانوں کا احتساب کا نظام بے نقاب ہو چکا ہے,سردار حبیب الرحمان خان

رحیم یارخان :پاکستان پیپلز پارٹی کے ضلعی صدر سردار حبیب الرحمان خان نے آج اپنی رہائش گاہ پر ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حکمرانوں کا احتساب کا نظام بے نقاب ہو چکا ہے۔

آج سپریم کورٹ آف پاکستان کے ساتھ ساتھ معتبر عالمی ادارے ہیومن رائٹس واچ نے بھی ڈکٹیٹر مشرف کے تخلیق کردہ کالے قانون کے تحت جنم لینے والے ادارے نیب کو انتقام کا آلہ قرار دے دیا ہے۔

ہیومن رائٹس واچ وہ عالمی ادارہ ہے جس کی رپورٹوں کو ہم ہمیشہ کشمیر میں ہونے والے ظلم وستم پر حوالے کے طور پر پیش کرتے رہے ہیں۔ ہیومن رائٹس واچ کے ایشیاء کے ڈائریکٹر بریڈ ایڈم کی رپورٹ کے مطابق، نیب سیاسی جماعتوں اور صحافیوں کے خلاف انتقامی کاروائیوں کا مرتکب ہوا ہے۔

اس رپورٹ کے مطابق نیب آصف علی زرداری، بلاول بھٹو، خواجہ سعد رفیق اور دیگر اپوزیشن رہنماؤں کے خلاف انتقامی کاروائیاں کر رہا ہے جب کہ حکمراں جماعت کے اپنے کیسز پر کاروائی نہیں حکمراں جماعت کے اپنے کیسز پر کاروائی نہیں کی جا رہی۔ رپورٹ میں خاص طور پر اس بات پر بھی دکھ کا اظہار کیا گیا ہے کہ جان بوجھ کر آصف علی زرداری کو ذاتی طور پر پیش ہونے  کو کہا جا رہا ہے جب کہ وہ شدید بیمار ہیں اور میڈیکل سرٹیفیکیٹ بھی پیش کر رہے ہیں۔

نیب صحافیوں اور صحافتی اداروں کے خلاف بھی انتقامی کاروائیاں کر رہا ہے جس کی تازہ ترین مثال میر شکیل الرحمان کی کئی ماہ سے ایک چونتیس سال پرانے کیس میں گرفتاری ہے۔

اس کے علاوہ صحافیوں کو اداروں سے نکلوایا جا رہا ہے اور ان کے پروگراموں پر پابندیاں عاید کی جا رہی ہیں۔نیب وہی ادارہ ہے جس کا سربراہ ایک ویڈیو میں غیر اخلاقی حرکتیں کرتا ہوا دکھایا گیا تھا مگر ہم نے اسے اس کا ذاتی فعل سمجھا تھا مگر جب سرگودھا یونی ورسٹی کے پروفیسر میاں جاوید احمد کی نیب کی حراست میں وفات ہو جاتی ہے یا وائس چانسلر پنجاب یونی ورسٹی ڈاکٹر مجاہد کامران کو ہتھکڑی لگا کر نیب کے سامنے پیش کیا جاتا ہے اور وہ اس ادارے کو سامنے پیش کیا جاتا ہے اور وہ اس ادارے کو ایک ٹارچر سیل قرار دیتے ہیں

تو ہمارے سر شرم سے جھک جاتے ہیں۔20 جولائی کے سپریم کورٹ کے فیصلے میں اس ادارے پر جس قسم کے سوالات اٹھائے گئے ہیں اور اب انسانی حقوق کے عالمی اداروں نے  جن حقائق کی نشان دہی کی ہے اس کے بعد اس ادارے کے تسلسل کا کوئی جواز باقی نہیں رہتا۔ اسے فوری طور پر تالا لگایا جائے،نیب حکام پر عالمی سفری پابندیاں عاید کی جائیں۔

انھوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پارٹی تمام سفارت خانوں کو خطوط ارسال کرے گی۔انھوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر جنوبی پنجاب صوبے کا قیام بھی عمل میں لایا جائے جس کا وعدہ حکمراں جماعت نے انتخابات میں کیا تھا۔ ہمیں سیکرٹریٹ کا لولی پاپ دے کر خاموش نہیں کیا جا سکتا اس خطے کے عوام کو اپنی شناخت چاہیے۔

انھوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ بلدیاتی انتخابات صاف، شفاف اور جماعتی بنیادوں پر اپنی اصل شکل میں کرائے جائیں۔ حکمرانوں کا ایک ایک دن اقوام عالم کی نظر حکمرانوں کا ایک ایک دن اقوام عالم کی نظر میں بدنامی کا باعث ہے اور عوام کی نظر میں، مہنگائی، بے روزگاری اور بد ترین حکمرانی کے ہاتھوں تباہی کا سبب ہے اس لیے حکمراں فوری طور پر مستعفی ہوں تا کہ مسائل کے حقیقی حل کے لیے عوام کی طرف رجوع کیا جا سکے۔

پریس کانفرنس سے,ٹکٹ ہولڈر حلقہ این اے 179میاں عامر شہباز، تحصیل صدر چوہدری جاوید حسن داد گجر، مخدوم حسن رضا، غلام عباس، مرزا امین خان،راجہ سولنگی نے بھی خطاب کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close