fbpx

رحیم یارخان میں اپنا گھر اپنی جنت کے نام پر لوٹ مار،انتظامیہ خاموش

ظاہر پیر میں اپنا گھر اپنی جنت کے نام پر لوٹ مار

رحیم یارخان (احمد زبیر) ظاہر پیر کے قریب سی پیک انٹرچینج اور بے نظیر شہید برج روڈ کی تعمیر کے ساتھ لوگوں نے پراپرٹی کی خریداری شروع کی تو سرمایہ داروں نے ظاہر پیر کو سونے کی چڑیا سمجھ کر یہاں کا رخ کر لیا ہے ، انوسٹرز حضرات نے ظاہر پیر شہر ، سمیت بے نظیر شہید روڈ پر قسطوں پہ زرعی رقبے خرید کر وہاں سہولیات کی فراہمی کے نام پر غیر قانونی ٹاؤنز اور کمرشل سینٹرز بنا لئے ہیں، گھر بنانے کے چکر میں لوگ جائیداد کے نام پر دھوکہ خرید رہے ہیں اور اپنی زندگی بھر کی کمائی یا پھر وراثتی جائیدادیں فروخت کر کے لٹنے لگے ہیں۔
اس وقت ظاہر پیر میں دو درجن کے قریب غیر قانونی ٹاؤنز و کالونیاں اور کمرشل سینٹر بنا کر بیچے جا رہے ہیں
نئے بننے والے ٹاؤن اور مارکیٹس کے نا تو کوئی نقشہ جات منظور ہیں اور نا ہی کوئی سرکاری فیسیں ادا ہوئیں ہیں جسکی وجہ سے نا تو انتقال منظور ہو رہے ہیں اور نا ہی کوئی سیوریج کی نکاسی آب بلدیہ اپنے ذمہ لیتی ہیں اور نا ہی واپڈا کو بجلی کے کنکشن کے لئے درخواست دی گئی ہے ، ڈویلپر حضرات نے اسی زمین سے مٹی اٹھا کر کچی سڑکوں کے نشانات بنا کر لوگوں کو بے وقوف بنانا شروع کر رکھا ہے ، ٹاون یا کمرشل مارکیٹ کو شروع کرتے ہی یہ لوگ بحریہ ٹاون طرز کی سہولیات کی فراہمی کے وعدوں پر کرکے سبز باغ دکھاتے ہیں اور جب تمام پلاٹس فروخت ہوجاتے ہیں تو ایسے غائب ہوتے ہیں جیسے گدھے کے سر سے سینگ-
یہ مافیا شارٹ کٹ طریقے سے کروڑ پتی بن رہا ہے جبکہ مقامی لوگوں کو سہانے خواب دکھا کر کنگال پتی کرنے میں مصروف ہے –
چاچڑاں روڈ ، کے ایل پی روڈ اور خصوصاً بے نظیر شہید برج روڈ پہ غیر قانونی طور پر کمرشل سینٹرز اور ٹاونز میں دھڑلے سے دکانوں اور پلاٹس کی فروخت جاری ہے-
زرعی زمین اونے پونے خریدی گئی ہے اور اس میں تیار فصل کپاس کو اجاڑ دیا گیا ہے۔حالانکہ حکومت کی طرف سے زرعی زمینوں میں ٹاؤن اور کسی بھی قسم کی کالونی بنانے پر پابندی عائد ہے مگر ظاہر پیر میں انتظامی رٹ کہیں نظر نہیں آرہی –
ظاہر پیر میں غیر قانونی ہاؤسنگ اسکیموں اور کمرشل سینٹرز بارے عوام اور انتظامیہ کو آگاہ کرکے اپنا فرض ادا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں-

ڈی سی رحیم یار خان سے گزارش ہے کہ اس اہم معاملہ کا نوٹس لیکر شہریوں کو لٹنے سے بچایا جائے-

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »