fbpx

اسسٹنٹ کمشنر لیاقت پور:آفیسران کو بھی یرغمال بنالیا

رحیم یارخان : لیاقت پور :اسسٹنٹ کمشنر لیاقت پور کی ناک کے نیچے انچارج رجسٹری برانچ محمد ندیم کی بدمعاشیاں،انچارج محمد ندیم ظالم کا روپ اختیار کرگیا،کرونا سے بھی زیادہ خطرناک کاموں میں مصروف،

رشوت کے لیے اپنے ایمان کی بھی قربانی دینے لگ گیا،بدنام زمانہ انچارج محمد ندیم نے آفیسران کو بھی یرغمال بنارکھا ہے، سپیشل رپورٹ کے مطابق ایک طرف تو کرونا وائرس نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے اور دوسری طرف رجسٹری برانچ کے انچارج محمد ندیم نے اپنی نامعلوم ٹیم کے ہمراہ لاکھوں روپے کما لیے دفتر میں چٹی دلالی کا راج شروع ہو چکا ہے رجسٹریوں کے بیانات شروع ہوچکے ہیں ذرائع کے مطابق انچارج نے کرپشن کا ایسا بازار گرم کر رکھا ہے کہ سائلین بغیر پیسے کے رجسٹری برانچ میں داخل نہیں ہو سکتے انچارج لیاقت پور کی کرپشن کی بے تحاشہ کاروائیاں بھی سامنے آئی ہیں جس میں وہ اپنے نمائندوں کے ذریعے عوام سے کھلم کھلا ایک ہزار روپے سے لے کر دو ہزار روپے تک فی رجسٹری وصول کرتا ہے اور اس انچارج کو پوچھنے والا کوئی نہیں ہے پہلے بھی انچارج کے خلاف کئی شکائتیں وصول ہوئی ہیں لیکن انتظامیہ نے اپنی آنکھیں بند کر رکھی ہیں ذرائع کے مطابق یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جب سے اس کی لیاقت پورمیں تعیناتی ہوئی ہے اپنی ٹیم کے ہمراہ اس نے لاکھوں روپے کما لیے ہیں اہل لیاقت پور نے انچارج رجسٹری برانچ لیاقت پور کے خلاف فوری کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ آنے والے وقت میں غریب عوام کو رجسٹری اپنے نام کرواتے وقت کوئی بھی رشوت نہ دینی پڑے شہریوں نے ڈپٹی کمشنر رحیم یار خان وزیر اعلی پنجاب اور وزیر اعظم پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ اس طرح کے کرپٹ آفیسرندیم کے خلاف جلد سے جلد سخت کاروائی کی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close