وکلا گردی کے خلاف پریس کلب کے باہر احتجاج

رحیم یارخان ویڈیوسکینڈل کیس وکلاء کے تشددکاشکارمدعی مقدمہ کاسول سوسائٹی کے ہمراہ پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ‘

وکلاء کی جانب سے اے ڈویژن میں درج کرائے گئے جھوٹے مقدمہ کوخارج اورگرفتارافرادکورہاکرنے کامطالبہ۔

تھانہ صدررحیم یارخان کے مشہورمقدمہ ویڈیوسکینڈل وزیادتی کیس کے مدعی محمدعرفان اوراس کے والدسعیداحمدنے سول سوسائٹی کے ہمراہ پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے میڈیاکوبتایاکہ انہوں نے ملزمان ذیشان‘ وسیم عرف پاناودیگرکے خلاف مقدمہ درج کرارکھاہے جس میں پیشی پرعدالت گئے
تووکلاء حافظ ولید‘ ابرارودیگرنے انہیں اورگواہان کوبدترین تشددکانشانہ بنایااورانہیں کئی گھنٹے حبس بے جامیں رکھنے کے بعد گواہان کوتھانہ اے ڈویژن پولیس کے حوالے کرکے جھوٹامقدمہ درج کرادیا‘
انہوں نے کہاکہ وکلاء وکالت کی آڑ میں ہڑتالیں اورپولیس کے داخلے پرپابندیاں لگاکرحراساں کرکے انصاف کی فراہمی میں رکاوٹ بن رہے ہیں‘
انہوں نے مطالبہ کیاکہ فوری طور پراے ڈویژن میں درج جھوٹامقدمہ خارج اورگواہان کورہاکیاجائے اورتھانہ صدرمیں درج مقدمہ میں ملزمان کوگرفتارکرکے انصاف کی فراہمی کے ساتھ ساتھ عدالت میں تشدداورحبس بے جامیں رکھنے کامقدمہ درج کرکے کارروائی عمل میں لائی جائے اگرمطالبات تسلیم نہ کیے گئے تواسلام آبادوزیراعظم ہاؤس اورلاہورمیں وزیراعلی ہاؤس کے باہراحتجاج اوربھوک ہڑتالی کیمپ لگائے جائیں گے۔
tafseer ibn khatir
Exit mobile version