کمسن نابالغ بچی کی زبردستی شادی,ورثا کا احتجاج

رحیم یارخان چچا نے کمسن نابالغ بچی کی زبردستی شادی کروادی، بچی کے والدین سراپا احتجاج، پولیس مقدمہ کے اندراج کے باوجود ملزمان کے خلاف کارروائی کرنے سے گریزاں،
ٹبہ قادر آباد کے رہائشی لطیف احمد نے اپنے بچوں کے ہمراہ ڈسٹرکٹ پریس کلب کے باہر احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ اس کی کمسن بچی سدرہ یاسمین جو کہ نابالغ ہے کو اس کے چچا نعیم اور چچی جعفراں نے نامعلوم شخص کو فروخت کرکے شادی کروادی اور اب بچی کو ملنے بھی نہیں دیتے،
اس سلسلہ میں مقدمہ کا اندراج کروانے کے باوجود دو سال گزرنے کو ہیں لیکن پولیس نے تاحال کسی بھی ملزم کو گرفتار کیا اور نہ ہی انصاف فراہم کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچی کی تاریخ پیدائش سال 2005 ہے جس کی عمر 14سال بنتی ہے لیکن ملزمان نے اس کی بچی کو زبردستی فروخت کرکے 12سال کی عمر میں شادی کروا کر زیادتی کی ہے۔
انہوں نے آئی جی پویس پنجاب، آرپی او بہاولپور اور ڈی پی او رحیم یارخان امیر تیمور سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر نوٹس لیکر انہےں انصاف فراہم کیاجائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »