fbpx

رحیم یارخان میں کورونا وائرس کے 88مریضوں کی سیمپلز رپورٹ آگئی,ڈی سی

رحیم یار خان :صوبائی وزیر آبپاشی پنجاب محمد محسن لغاری نے کہا ہے کہ مشکل کی اس گھڑی میں عوام حکومت اور اداروں کا ساتھ دیں،حکومت کے تمام تر فیصلے عوامی مفاد اور اپنے شہریوں کو وبائی مرض کورونا کے اثرات سے محفوظ رکھنا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کے ہمراہ ضلعی رابطہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل شیخ محمد طاہر، سی ای او ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا، ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرز ڈاکٹرحسن خان، ڈاکٹر غضنفر شفیق سمیت دیگر متعلقہ افسران موجود تھے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف فرنٹ لائن پر کام کرنیوالے ڈاکٹرز، نرسز پیرا میڈیکل و دیگر سٹاف کا تحفظ حکومت پنجاب کی اولین ترجیح ہے ہنگامی بنیادی پر حفاظتی کٹس فراہمی کے لئے ضلعی انتظامیہ کی بھر پور معاونت کی جائے گی۔

ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا کہ ضلع میں کورونا وائرس کے مشتبہ88مریضوں میں سے 59کی سیمپلز رپورٹ منفی آئی ہے جبکہ 1مثبت مریضہ جانبحق ہوئی ہے جبکہ دیگر28کی رپورٹس کا انتظار ہے۔انہوں نے کہا کہ ایرانی زائرین سمیت بیرون ممالک سے آنے والے افراد کی تلاش اور سکریننگ کا عمل جاری ہے۔

انہوں نے ہدایت کی کہ تبلیغ کے لئے بیرون اضلاع و ممالک سے آنے والی تبلیغی جماعتوں کو جس مسجد یا مرکز میں وہ موجود ہیں انہیں وہاں ہی قرنطینہ کر دیا جائے جبکہ زیادہ تعداد میں موجود تبلیغی جماعت کے ممبران کے ٹیسٹ بھی لئے جائیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے حکومتی احکامات پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے اور اس ضمن میں کسی قسم کی نرمی نہ کی جائے۔

سی ای او ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ حکومتی ہدایات کے مطابق ایسے افراد جو حالیہ دنوں میں ایران یا دیگر متاثرہ ممالک سے آئے ہیں انہیں 14روز کے لئے ان کے گھروں میں قرنطینہ کیا جائے گا اور ان کے گھروں کے باہر نوٹس چسپاں کیا جائے گا کہ شہری ان لوگوں سے ملنے سے گریز کریں۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز 71بیرون ممالک سے آئے افراد کی سکریننگ کا عمل مکمل کیا گیا ہے۔اجلاس میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کی جانب سے صوبائی وزیر اور ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ذاتی کاوشوں کو سراہا گیا کہ جنہوں نے بروقت نوٹس لیتے ہوئے ہیلتھ عملہ کے لیے حفاظتی کٹس سمیت دیگر ضروری ہیلتھ سامان کی فراہمی یقینی بنانے میں اپنا اہم کردار ادا کیا اور اسے ذمہ داری کے ساتھ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »