رمضان المبارک میں کروڑوں روپے ڈکارنے کا پروگرام..

corrupt mafia rahim yar kha news

رحیم یار خان :2018ء کی طرح ضلع بھر کی بیشتر فلور ملز کا ایک بارپھر محکمہ خوراک سے رمضان المبارک میں سبسڈی والی گندم خرید کر غریبوں کو سستا آٹا دینے کے نام پر کروڑوں روپے ڈکارنے کا پروگرام۔ 2018ء میں رمضان کوٹہ کے نام پر محکمہ خوراک کی ملی بھگت سے ضلع بھر کی فلور ملز نے اس بہتی گنگا میں ہاتھ دھو کر صرف رمضان المبارک کے ایک ماہ میں 50لاکھ روپے فی کس سے زائد کمائے جبکہ اس وقت کے ڈی ایف سی نے فلور ملز سے تقریبا ّ 6کروڑ روپے کا کمیشن لیا۔ڈی ایف سی محبوب احمد اور میرٹ سے ہٹ کر مذکورہ کوٹہ لینے والی فلور ملز کے خلاف نیب میں کارروائی شروع۔ رواں سال فلور ملز کو سستی گندم دینے کی بجائے شہریوں کو براہ راست سستی گندم دی جائے تاکہ سستی گندم کے ثمرات فلور ملز کی بجائے براہ راست غریب شہریوں تک پہنچ سکے۔تفصیلات کے مطابق سال2018ء میں اس وقت کی نگراں حکومت پنجاب نے رمضان المبارک کے دوران غریب شہریوں کو سستتا آٹا دینے کے لئے ایک رمضان پیکج کا اعلان کیا جس کے مطابق فلور ملز کو گندم ایک ہزار300روپے فی من دینے کی بجائے800روپے فی من دی گئی اور 100کلو گرام گندم کے عوض فلور ملز کو80کلو گرام آٹا انتہائی سستے داموں اوپن مارکیٹ میں فروخت کرنے کے ایم او یوز سائن کئے گئے اور ان ایم او یوز کے تحت فلور ملز کو اتنی گندم ہی محکمہ خوراک سے سستے داموں ملنی تھی کہ جتنا آٹا روز فروخت ہوتا مگر ضلع بھر کی صرف تین فلور ملز نے اس بہتی گنگا میں ہاتھ نہیں دھوئے جبکہ ڈی ایف سی محبوب احمد کی ملی بھگت سے ضلع بھر کی100سے زائد فلور ملز نے پورے رمضان المبارک کے دورا ن اس کوٹے کے تحت 100فیصد کوٹا محکمہ خوراک سے خریدا لیکن محکمہ خوراک کی ملی بھگت سے فروخت ہونے والے آٹے کی ویریفیکیشن کئے بغیران تمام فلور ملز نے پورے رمضان المبارک کے دوران گندم کا مکمل کوٹہ خریدا اور صرف ایک ماہ کے دوران فی فلور ملز نے 50لاکھ روپے سے زائد کی کرپشن کی جبکہ ڈی ایف سی نے صرف ایک ماہ کے دوران6کروڑ روپے سے زائد کی کرپشن کی ۔ذرائع کے مطابق ڈی ایف سی محبوب احمد نے ان فلور ملز کو بھی کوٹہ جاری کیا جو کہ بند تھیں لیکن انہیں بھی یہ کوٹہ جاری کیا گیا ۔معلوم ہوا ہے کہ نیب اور انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ میں ڈی ایف سی محبوب احمد اور اس فراڈ میں ملوث فلور ملز کے خلاف عنقریب انکوائریاں شروع ہو رہی ہیں تاکہ غریبوں کو سستا آٹا دینے کے نام پر سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے والے محکمہ خوراک کے آفیسران اور فلور ملز کے خلاف کارروائی کی جا سکے۔

corrupt mafia rahim yar kha news

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »