fbpx

دودھ میں ملاوٹ کرنے والوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے

رحیم یار خان ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر نے کہا ہے کہ شعبہ زراعت میں جدت اور حکومتی ثمرات کے اقدامات کسانوں تک پہنچانے کے لئے محکمہ زراعت کے تمام ونگز کسانوں کے ساتھ قریبی رابطہ رکھیں،
افسران زرعی کھادوں کی قیمتوں پر کڑی نظر اور ادویات کے معیار کو باقاعدگی سے چیک کریں، ملاوٹ مافیا سے کوئی رعایت نہ کی جائے،
نہری پانی چوری کے واقعات کی سختی سے روک تھام اور ایسی وارداتوں میں ملوث عناصر کو قانون کے شکنجے میں لانے کے لئے محکمہ انہار اپنا کردار ادا کرے،
دودھ میں ملاوٹ کرنے والوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا اس سلسلہ میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کی مقامی افسران نے میٹنگ کرکے انہیں ٹاسک سونپا جائے گا،
شہری حدود سے گزرنے والی نہروں میں کچرا پھینکنے والوں پر مقدمات درج کئے جائیں گے۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹر کٹ ایگری کلچر ایڈوائزری اینڈ ٹاسک فورس کمیٹی کے اجلا س کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت راﺅ اشفاق احمد سمیت محکمہ انہار، لائیو سٹاک، فشریز، واٹر منیجمنٹ سمیت دیگر متعلقہ اداروں اور کاشتکار تنظیموں کے نمائندگان چوہدری محمد یٰسین، احمد یار ولانہ، جام ایم ڈی گانگا، ملک اللہ نواز مانک، ابرار احمد سلیمی، چوہدری عبدالصمد سمیت دیگر موجو دتھے۔
ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے کسان تنظیموں کے نمائندگان کی جانب سے اجناس کی قیمتوں میں اضافہ کے مطالبہ پر کہا کہ ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل کی ہدایت پر زرعی اجناس کی قیمتوں میں اضافہ سے متعلق کسانوں کی مطالبات متعلقہ فورم تک پہنچا دیئے گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ حکومت کاشتکاروں کو سہولیات پہنچانے کے لئے اقدامات کر رہی ہے ۔انہوں نے محکمہ زراعت کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ کاشتکاروں کے مسائل حل کرنے کے لئے ان سے قریبی رابطہ میں ر ہیں جبکہ فیلڈ سٹاف کو بھی پابند کیا جائے کہ وہ حکومتی اقدامات بارے کاشتکاروں کو تسلسل کے ساتھ آگہی فراہم کر یں۔
انہوں نے اجلاس میں کاشتکاروں کی جانب سے نشاندہی کئے جانے والے مسائل پر متعلقہ محکموں کو احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ دودھ میں ملاوٹ کی روک تھام کے لئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کو ہدایات جار ی کی جائیںگی جبکہ زر عی کھادوں و ادو یات میںملاوٹ کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا۔

انہوں نے ایکسین انہار کو ہدایت کی کہ وہ اپنے فیلڈ سٹاف کی کارکردگی بہتر بناتے ہوئے پانی چوری کی روک تھام یقینی بنائیں اور پانی کی تقسیم کے حو ا لہ سے اپنا پلان کسانوں اور ضلعی انتظامیہ کے ساتھ شیئر کریں۔انہوں نے بیمہ تکافل کے ذمہ دار ان کو ہدایت کی کہ وہ اپنی پالیسی اور ضلع میں رجسٹر ڈ کسانوں بارے آئندہ اجلاس میں مکمل بریفنگ دیں جبکہ بغیر کھدائی کے پانی کے معیار کا جائزہ لینے والے محکمہ زراعت کے ڈرلنگ ونگ کو ہدایت کی کہ وہ اپنی سروسز بارے تشہیر کریں تاکہ زیادہ سے زیادہ کاشتکار اس سے مستفید ہو سکیں۔
اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت نے محکمہ زراعت کے جاری پروگرامز بارے شرکاءکو آگاہ کیا اس موقع پر کاشتکار تنظیموں کے رہنماﺅں چوہدری محمد یسین، جام ایم ڈی گانگا، احمد یار ولانہ، ملک اللہ نواز مانک، ابرار احمد سلیمی و دیگر نے کہا کہ محکمہ انہار کو پابند کیا جائے کہ وہ پانی چوری کی روک تھام کے لئے اقدامات کریںاور ملوث اہلکاروں کے خلاف کارروائی کریں۔
انہوں نے پانی کی تقسیم کا پلان کاشتکاروں سے شیئر کرنے اور پانی کی منصفانہ تقسیم کا مطالبہ کیا۔کاشتکاروں نے پنجاب سیڈ کارپوریشن کی استعداد کار میں اضافہ اور نرخوں کے از سر نوجائزہ کی ضرورت پر بھی زور دیا۔کاشتکار تنظیموں کے رہنماﺅں نے موجودہ مہنگائی کے تناسب سے اجناس کی قیمتوں میں اضافہ کے مطالبہ کو متعلقہ فورم تک پہنچانے کا بھی مطالبہ کیا ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »