fbpx

رحیم یارخان میں سیلابی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تمام محکمے الرٹ

رحیم یار خان :ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا ہے کہ ممکنہ سیلابی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تمام محکمے مکمل طور پر الرٹ اور مشینری کو فنکشنل حالت میں رکھیں۔
اسسٹنٹ کمشنرز اپنی تحصیلوں کے انہار افسران اور ایس ڈی پی اوز کے ہمراہ دریائی سندھ کے حفاظتی بند کا سروے کرتے ہوئے تجاوزات کا خاتمہ، حفاظتی بند پر جاری کام کی رفتار و معیار اور ممکنہ طور پر متاثر ہونے والے اہم دریائی بندو علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے پیشگی حکمت عملی مرتب کرکے ڈپٹی کمشنر آفس کو ارسال کریں۔
یہ ہدایات انہوں نے ضلعی ڈیزاسٹر منیجمنٹ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر، اسسٹنٹ کمشنر چوہدری اعتزاز انجم سمیت محکمہ انہار، ریسکیو1122، ایجوکیشن، ہیلتھ ، زراعت کے افسران موجود تھے جبکہ اسسٹنٹ کمشنرز خانپور فاروق احمد، صادق آباد عامر افتخار اور لیاقت پور ارشد وٹو نے بذریعہ ویڈیو لنک اجلاس میں شرکت کی۔
ڈپٹی کمشنر نے ہدیات کی کہ ریسکیو اینڈ ریلیف سرگرمیوں میں استعمال ہونے والی تمام مشینری کو فنکشنل ہونا چاہیے جبکہ ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ریسکیو1122تمام تحصیل کونسل، میونسپل و ٹاﺅن کمیٹیز کے چیف افسران نے مشینری فنکشنل ہونے کا سرٹیفکیٹ حاصل کریں۔
انہوں نے محکمہ لائیو سٹاک کو ہدایت کی کہ وہ دریائی بیلٹ میں موجود مویشیوں کی ویکسی نیشن کا عمل جلد مکمل کرے جبکہ محکمہ زراعت ممکنہ طور پر دریائی بیلٹ میں متاثر ہونے والے اجناس کا سروے کرتے ہوئے ریکارڈ مرتب کرے۔
اجلاس میں ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسرریسکیو1122ڈاکٹر عبدالستار نے بریفنگ دیتے ہوئے سابقہ سیلابی صورتحال سمیت پہنچنے والے نقصانات اور انتظامیہ کی جانب سے ریسکیو اینڈ ریلیف اپریشن بارے شرکاءکو آگاہ کیا۔
انہوں نے بتایا کہ ممکنہ سیلابی صورتحال کے پیش نظر دریائی بیلٹ کے اندر اور ملحقہ91مواضعات جس میں سے 51جزوی اور44مکمل متاثر ہونے کا خدشہ ہے
جبکہ پی ڈی ایم اے کے سروے کے مطابق ان مواضعات میں ممکنہ سیلابی صورتحال ہونے پر 3لاکھ25ہزار آبادی اور 4لاکھ85ہزار مویشیوں کے متاثر ہونے کا خدشہ بھی موجود ہے
جس کے لئے پیشگی حکمت عملی مرتب کی جا رہی ہے تاکہ کسی بھی ہنگامی صورتحال سے قبل عوام کو ان کے قیمتی سامان اور مویشیوں کے ہمراہ محفوظ مقامات پر منتقل کیا جا سکے
جس کے لئے ضلع بھر میں21ریلیف کیمپس قائم کئے جائیں گے۔محکمہ انہار کے افسران نے بتایا کہ دریائے سندھ کے حفاظتی بند پر تحصیل خانپور میں گدھ پور جبکہ صادق آباد میں بنگلہ دل کشا کے مقام پر کام جاری ہے
جس جلد مکمل کر لیا جائے گا۔دریں اثناءڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے ضلع بھر کے ریونیو افسران سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے ہدایت کی کہ مختلف مدات میں سرکاری بقایا جات کی وصولی کے اہداف کو یقینی بنایا جائے، سرکاری واجبات کی تاخیر پر متعلقہ افسران جوابدہ ہونگے۔
انہوں نے اسسٹنٹ کمشنرز کو بھی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ وہ ریونیو افسران کو فیلڈ میں نکالتے ہوئے روزانہ ہر ریونیو افسر کی انفرادی ریکوری رپورٹ ڈپٹی کمشنر آفس ارسال کریں۔انہوں نے کہا کہ سرکاری اہداف کے حصول میں سست روی یا ناقص کارکردگی دکھانے پر سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »