fbpx
پریس کلبرحیم یارخان

عمران خان کی مقبولیت میں تیزی سے ریکارڈکمی ہوئی،حامد سعید کاظمی

رحیم یارخان :ملک کو موجودہ صورتحال سے نکالنے کیلئے مل بیٹھنے کی ضرورت ہے عمران خان سمیت موجودہ حکومت کی مقبولیت میں جس تیزی سے کمی ہوئی ریکارڈ ہے

حکومت ہٹاﺅ تحریک میں خیال کیا جارہا ہے کہ مائنس نواز شریف فارمولا چل رہا ہے موجودہ ملکی صورتحال کیلئے دُعاﺅں کے ساتھ ساتھ جدوجہد کی ضرورت ہے پارلیمنٹ کو جس طرح اپنا کردارا دا کرنا چاہیے وہ اس دورہ حکومت میں نظر نہیں آیا حکومت کو سپورٹ کرنے والے بھی تھکاوٹ کا شکار ہیں پیپلز پارٹی کیلئے امید کی کرن صرف بلاول بھٹو ہے آصف زرداری نے ہمیشہ عزت دی پیپلز پارٹی میں رہ کر کٹ پتلی نہیں بن سکتا اب پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ان خیالات کا اظہار سابق وفاقی وزیر مذہبی امور ممتاز عالم دین علامہ حامد سعید کاظمی نے گزشتہ روز ڈسٹرکٹ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ آٹے کا بحران پیدا کیا جارہا ہے جو حکمرانوںکیلئے خطر ناک ثابت ہوگا حکمرانوں کو عوام پر رحم کرنے کی ضرورت ہے موجودہ دورہ حکومت میں پارلیمنٹ کا کوئی کردار نہیں موجودہ صورتحال میں سب کو ملک بیٹھنے کی ضرورت ہے عمران خان کے اپنے بیانات ہی ان کی مقبولیت میں کمی کا باعث بن رہے ہیں کم مدت میں عمران خان سمیت موجودہ حکومت کی مقبولیت میں ریکارڈ کمی ہوئی ہے ۔ ملک میں رشوت کا بازار گرم ہے صورتحال برقراررہی تو انڈونیشیا طرز کا خونی انقلاب آسکتا ہے جو تباہی کا باعث ہوگا۔

بحرانوں کا خاتمہ کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ اب عوام کی رائے معلوم کرنا مشکل ہوگیا ہے کیونکہ سوشل میڈیا کو دور اپنے عروج پر ہے جس میں حقائق کے برعکس تشہیر کرنا عام ہے ۔موجودہ حکومت کے پاس کوئی پالیسی نہیں یہی وجہ ہے کہ آج ملک بحرانوں کا شکار ہے انہوںنے کہا کہ موجودہ صورتحال میں پیپلز پارٹی کیلئے امید کی کرن صرف بلاول بھٹو ہیں ایک سوال کے جواب میں علامہ حامد سعید کاظمی نے کہا کہ سابق صدر آصف علی زرداری نے انہیں ہمیشہ عزت دی ہے لیکن پیپلز پارٹی میں رہ کر کٹ پتلی نہیں بن سکتا اب پیپلز پارٹی سے کوئی تعلق نہ ہے ۔

جس کی وجہ کچھ ایسی قوتیں حاوی ہوگئی تھیں کہ ان کے ہوتے ہوئے پیپلز پارٹی میں رہنا مشکل تھا اس موقع پر علامہ حامد سعید کاظمی نے پاکستان اور خصوصاً کشمیری عوام کیلئے خصوصی دُعا بھی کی ۔رحیم یارخان( )ملک کو موجودہ صورتحال سے نکالنے کیلئے مل بیٹھنے کی ضرورت ہے عمران خان سمیت موجودہ حکومت کی مقبولیت میں جس تیزی سے کمی ہوئی ریکارڈ ہے حکومت ہٹاﺅ تحریک میں خیال کیا جارہا ہے کہ مائنس نواز شریف فارمولا چل رہا ہے موجودہ ملکی صورتحال کیلئے دُعاﺅں کے ساتھ ساتھ جدوجہد کی ضرورت ہے پارلیمنٹ کو جس طرح اپنا کردارا دا کرنا چاہیے وہ اس دورہ حکومت میں نظر نہیں آیا حکومت کو سپورٹ کرنے والے بھی تھکاوٹ کا شکار ہیں پیپلز پارٹی کیلئے امید کی کرن صرف بلاول بھٹو ہے آصف زرداری نے ہمیشہ عزت دی پیپلز پارٹی میں رہ کر کٹ پتلی نہیں بن سکتا اب پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ان خیالات کا اظہار سابق وفاقی وزیر مذہبی امور ممتاز عالم دین علامہ حامد سعید کاظمی نے گزشتہ روز ڈسٹرکٹ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ آٹے کا بحران پیدا کیا جارہا ہے جو حکمرانوںکیلئے خطر ناک ثابت ہوگا حکمرانوں کو عوام پر رحم کرنے کی ضرورت ہے موجودہ دورہ حکومت میں پارلیمنٹ کا کوئی کردار نہیں موجودہ صورتحال میں سب کو ملک بیٹھنے کی ضرورت ہے عمران خان کے اپنے بیانات ہی ان کی مقبولیت میں کمی کا باعث بن رہے ہیں کم مدت میں عمران خان سمیت موجودہ حکومت کی مقبولیت میں ریکارڈ کمی ہوئی ہے ۔

ملک میں رشوت کا بازار گرم ہے صورتحال برقراررہی تو انڈونیشیا طرز کا خونی انقلاب آسکتا ہے جو تباہی کا باعث ہوگا۔ بحرانوں کا خاتمہ کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ اب عوام کی رائے معلوم کرنا مشکل ہوگیا ہے کیونکہ سوشل میڈیا کو دور اپنے عروج پر ہے جس میں حقائق کے برعکس تشہیر کرنا عام ہے ۔موجودہ حکومت کے پاس کوئی پالیسی نہیں یہی وجہ ہے کہ آج ملک بحرانوں کا شکار ہے انہوںنے کہا کہ موجودہ صورتحال میں پیپلز پارٹی کیلئے امید کی کرن صرف بلاول بھٹو ہیں ایک سوال کے جواب میں علامہ حامد سعید کاظمی نے کہا کہ سابق صدر آصف علی زرداری نے انہیں ہمیشہ عزت دی ہے لیکن پیپلز پارٹی میں رہ کر کٹ پتلی نہیں بن سکتا اب پیپلز پارٹی سے کوئی تعلق نہ ہے ۔جس کی وجہ کچھ ایسی قوتیں حاوی ہوگئی تھیں کہ ان کے ہوتے ہوئے پیپلز پارٹی میں رہنا مشکل تھا اس موقع پر علامہ حامد سعید کاظمی نے پاکستان اور خصوصاً کشمیری عوام کیلئے خصوصی دُعا بھی کی ۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close