رحیم یارخان میں کورونا کے مریضوں میں ہوشربا اضافہ،انتظامیہ غائب

رحیم یارخان سندھ پنجاب بلوچستان بارڈ پر واقع رحیم یارخان میں کورونا کے مریضوں میں تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ،شیخ زید ہسپتال میں متعدد ڈاکٹرکورونا کا شکار ہو گئے ہیں
25 مئی سے ابھی تک بھاولپور کی کورونا تشخیصی لیبارٹری میں رحیم یار خان کے 587 ٹیسٹ ویٹنگ لسٹ میں ہیں ۔جن میں 100 کے قریب ہیلتھ کیئر اسٹاف کے ہیں ۔ٹیسٹوں میں لیٹ ہونے کی وجہ سے کوروناکا پھیلاو شدید ہونے کے ساتھ ساتھ علاج معالجہ میں تاخیر ہو رہی ہے


50لاکھ سے زیادہ آبادی کے حامل پنجاب کے چوتھے بڑے ضلع رحیم یار خان میں ٹیسٹ کی سہولت میسر ہونا ناگزیر ہو گئی ہے۔۔
یہی صورتحال برقرار رہی تو نوبت یہ ہو گی کہ ہسپتالوں کے بجائے مریض سڑکوں پر ہوں گے۔۔خطرناک بات یہ بھی ہے کہ بہت سے سینئر ڈاکٹر بھی کورونا کی زد میں ہیں اور وہ اپنی بقاء کی جنگ لڑ رہے,بہت سے شہری کورونا کے سبب زندگی کی بازی ہار رہے ،لیکن ریکارڈ میں نہیں،بہت سے مریضوں کو چھپایا جا رہا ہے تاکہ ان کی فیملی کورونا ایس او پی کی زد میں نہ آئے
وزیر اعلی پنجاب ،ممبران قومی و صوبائی اسمبلی سے درخواست ہے کہ رحیم یارخان میں کورونا تشخیصی لیبارٹری کا قیام جلد ازجلد عمل میں لایا جائے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »