fbpx

بھارت کو ایک اور بڑا جھٹکا، پاکستان کے بعد ایران کی فضائی حدود بھی بند

بھارت کی ہوائی جہاز راں کمپنیوں کو ایران کی ’متاثرہ‘ فضائی حدود سے دور رہنے کی ہدایت کردی گئی ہے۔ جہاز راں کمپنیوں کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ اس مقصد کے لیے اپنے فضائی راستوں کا ازسر نو تعین کریں۔بھارت کے ریاستی فیصلے کے تحت ہوائی جہاز راں کمپنیاں اس فضائی حدود میں داخل نہیں ہوں گی جو ان کے خیال میں متاثرہ ہیاین ڈی ٹی وی کے مطابقبھارت کے ڈائریکٹر جنرل سول ایوی ایشن نے تمام جہاز راں کمپنیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ایران کی اس فضائی حدود سے دور رہیں جومتاثرہ ہے۔ انہوں نے تمام جہاز راں کمپنیوں سے کہا ہے کہ وہ اپنی پروازوں کے لیے از سر نو راستوں کا تعین کریں جو ان کے لیے مناسب ہوں۔بھارت سے قبل جرمنی، ہالینڈ اور آسٹریلیا نے بھی اپنی فضائی کمپنیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ایران اور آبنائے ہرمنز کی فضائی حدود پہ پرواز کرنے سے اجتناب برتیں۔اس سے قبل بھارت کی وزارت دفاع یہ اعلان بھی کرچکی ہے کہ اس کی نیوی کے دو جہازخلیج اومان میں متعین ہوں گے جو اس کے تجارتی بحری جہازوں کی حفاظت کو یقینی بنائیں گے۔امریکہ اسی ضمن میں اپنی فضائی کمپنی کو پہلے ہی ہدایات جاری کرچکا ہے۔ ایران اور امریکہ کے درمیان موجود کشیدگی میں گزشتہ چند دنوں کے دوران بے پناہ اضافہ ہوا ہے جس کے بعد سے مختلف ممالک کی فضائی کمپنیاں اپنے راستوں کا ازسر نو تعین کررہی ہیں۔واضح رہے پاکستانی علاقے پر فضائی حملے اور بھارتی طیارے کی تباہی کے بعد پاکستان نے بھی بھارت کیلئے فضائی حدود بند کررکھی ہیں جس کی وجہ سے بھارتی فضائی کمپنیوں کو بڑے نقصان کا سامناکرنا پڑ رہاہے اور طویل راستے اختیارکرنے پر مجبور ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »