fbpx

رحیم یارخان مغویوں کو بازیاب نہ کروایا گیا تو آئی آفس کا گھیراؤ کیا جائے گا ،ورثا

رحیم یارخان:اوباڑو کے رہائشی مغوی فضل الرحمن کو اگر بازیاب نہ کرا گیاتو ہم تھانوں کا گھیراﺅ کریں گے، احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے، آئی جی آفس کے باہر بھی دھرنے دئیے جائیں گے، پولیس مغوی کو برآمد کرانے سےانکاری  ہے ،مغوی کی برآمدگی کے لیے آئندہ 48گھنٹوں میں لائحہ عمل طے کیاجائے گا

ان خیالات کا اظہار مغوی کے والد مغیم ممدانی، رئیس عبدالقادر،چوہدری اصغر علی عبدالواحد، میاں احمد نے جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی رہنما مولانا فتیح العباد کے ہمراہ جامعہ درالعلوم عثمانیہ میںجے یو آئی کے سیکرٹریٹ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا

انہوں نے کہاکہ21سالہ نوجوان فضل الرحمن نے چک نمبر 83 این پی رحیم یارخان کے رہائشی عبدالرزاق کی بیٹی شازیہ بی بی سے پسند کی شادی کی بعدازاں چاچڑ برادریکے سردار عبدالرحمن چاچڑ کے ذریعے لڑکی کو ان کے والدین کے حوالے کر دیا
28جولائی کو لڑکی سے فون کروا کے گھر بلوایا بعدازاں انھیں محبوس کر لیااس دوران مغوی پر بے پناہ جنسی  تشدد کیا گیا اسے پیشاب پلایا اور اسےڈکری کے سردار کے حوالے کر دیا

8 روز گزرنے کے باوجود بھی پولیس تھانہ کوٹ سمابہ میں مقدمہ درج کرانے کے باوجود بھی پولیس نے مغوی کو سرداروں کے چنگل سے آزاد نہیں کرایا ملزمان محمد سلیم،عبدالخالق، محمد حیات، رسولبخش، فیاض عرف ٹیڈی ودیگر پانچ نامعلوم افراد کے خلاف تھانہ کو ٹ سمابہ میں مقدمہ نمبر365 ت پ درج ہونے کے باوجود بھی پولیس ملزمان کو گرفتار نہ کر سکی ہے،

 ہم آئی جی پنجاب سے مطالبہ کرتے ہیں کہ مغوی فضل الرحمنسرداروں کی قید سے آزادی دلائی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close