کلبھوشن یادیو کیس عدلیہ اور پاکستان کے قانون و آئین کی سر بلندی ہے

رحیم یارخان: کلبھوشن یادیو کیس میں پاکستان کی جیت ملکی  سلامتی کے ذمہ دار اداروں، عدلیہ اور پاکستان کے قانون و آئین کی سر بلندی ہے۔

عالمی عدالت انصاف میں پاکستانی موقف کی توثیق نے قوم کا سر فخر سے بلند کر دیا۔ آئندہ کسی بھی ملک دشمن کو ایسی کارروائی کے لیے ہزار بار سوچنا پڑے گا۔

ان خیالات کا اظہار ہادی عالم ویلفئیر سوسائٹی کے جنرل سیکرٹری چوہدری محمد بوٹا طاہر نے عالمی عدالت انصاف کے کلبھوشن کیس کے فیصلے پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا ہندوستانی بہریہ کے اہلکار کا جعلی دستاویزات پر پاکستانی سرحد میں گھس کر دہشت گردی کو ہوا دینے اور پاکستانی عوام کو قتل کروانے اور دیگر سنگین جرائم کا ارتکاب کرنے والے کلبھوشن یادیو کو پاکستان کے خفیہ ادروں (پاک فوج) نے جس طرح گرفتار کر کے اس کے نیٹ ورک کو توڑا اور اس کے خلاف مکمل ثبوت کے ساتھ مقدمہ دائر کیا وہ قابل تحسین ہے جب اس ملک دشمن کے وارث ہندوستان نے عالمی عدالت انصاف کا دروازہ کھٹکھٹایا تو بھی عدلیہ اور ملکی سلامتی ادروں نے مضبوط کیس پیش کر کے بھر پور پیروی کی جس کی وجہ سے اقوام عالم نے دیکھا کہ پاکستان کا کیس سچا ہے اور عالمی عدالت انصاف نے قرین انصاف فیصلہ صادر کرتے ہوئے

پاکستان کے حق میں فیصلہ دیا ہے جس پر ہم اس کیس پر کام کرنے والے تمام اداروں کو سلام پیش کرتے ہیں اور ہم ملکی سلامتی کے ادروں کے ساتھ تھے، ہیں 

rahim yar khan

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close