fbpx

رحیم یارخان میں ٹڈی دل نے تباہی مچادی آم کے باغات تباہ،انتظامیہ بے بس

رحیم یارخان میں ٹڈی دل نے تباہی مچادی ،انتظامیہ بے بس

رحیم یار خان :ٹڈی دل کی تباہ کاریاں دیکھیں. یہ آم کے پودوں کا حشر نشر ہے. باقی فصلات کا اندازہ آپ خود لگا لیں کہ وطن عزیز میں ٹڈی دل کے حملے کی زد میں آنے والے علاقوں اور اضلاع کے حالات کہاں پہنچ چکے ہیں.

مذکورہ بالا تصاویر ضلع راجن پور تحصیل روجھان کے علاقے شاہ والی کے ایک باغ کی ہیں. جو صاحبان موقع کی صورت حال دیکھنا چاہتے ہوں وہ ضلع رحیم یار خان کے معروف صنعت کار حاجی محمد ابراہیم کے اس فارم کا وزٹ کر سکتے ہیں.

پاکستان کسان اتحاد کے ڈسٹرکٹ آرگنائزر جام ایم ڈی گانگا نے کہا ہے کہ حکمران حالات کی نزاکت اور متوقع تباہ کن بحران کا احساس کریں.

ٹڈی دل کرونا سے بڑی آفت اور وبا ہے. غذائی بحران سے بھوک ننگ اور بیماریوں میں اضافے کے ساتھ چوریوں ڈاکہ زنی، بدامنی میں بھی شدید اضافہ ہوگا. ٹڈی کے خاتمے کے لیے حکمران، سرکاری ادارے، عوام و کسان اپنااپنا ذمہ دارانہ قومی کردار ادا کریں.

حکومت ملک کے اندر ٹڈی دل کی افزائش کو روکنے جے علاوہ بیرونی حملہ آور ٹڈی دل کے لشکروں کو بھی روکنے اور تلف کرنے کی مربوط اور ملک گیر مہم اپنائے. صحرائی علاقوں میں جہازوں اور آبادی والے علاقوں میں بوم مشینوں اور دیگر بڑی مشینوں کے ذریعے سپرے کرنے کے انتظامات کو یقینی بنائے. کسان اور زراعت کی تباہی سے قومی معیشت کی بربادی ہوگی. پاکستان غذا کے لیے بھی دوسروں کا محتاج ہو جائے گا.

ضلع میں ٹڈی دل (لوکسٹ) کے حالیہ اجناس پر حملوں اور انسدادی کارروائیوں کا جائزہ لینے کے لئے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا۔جس میں اسسٹنٹ کمشنر (ایچ آر)ریاست علی، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ دیگر تعاون کرنے والے اداروں کے ہمراہ کسانوں کی فصلوں کو ٹڈی دل کے حملوں سے محفوظ رکھنے کے لئے تمام تر دستیاب وسائل کے ساتھ فیلڈ میں موجود ہے ۔انہوں نے کہا کہ کمشنر بہاولپور ڈویژن کی ٹڈی دل کے سدباب کےلئے حالیہ گائیڈ لائن اور ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر فیلڈ ٹیموں کی افرادی قوت میں جدید مشینری کے ساتھ اضافہ کیا جا رہا ہے تاکہ بہتر انداز سے کمبٹ اپریشن کیا جاسکے۔اجلاس میں محکمہ زراعت کی مرکز سطح پر تشکیل ٹیموں کی تعداد میں اضافہ خصوصاً تحصیل رحیم یار خان اور صادق آباد میں مختلف مواضعات کی سطحنئے مراکز تشکیل دیتے ہوئے مزید سرویلنس اور اپریشن ٹیمیں تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے متاثرہ علاقوں میں فضائی سپرے کے لئے طیارہ فراہم کیا جا رہا ہے جس سے ٹڈی دل کے خلاف جاری انسدادی کارروائیوں میں مزید بہتر آئے گی جبکہ ٹڈی دل سپرے آپریشن میں ڈبل کیبن گاڑیاں، جیکٹو سپرئیر، شولڈر ماو ¿نٹڈ سپرئیر، باﺅزرکی تعداد بڑھانے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ بروقت انسدادی آپریشن کے باعث فصلوں کو زیادہ نقصان نہیں ہوا اور ٹڈی دل نے درختوں پر اپنا پڑاﺅ ڈالا تاہم براﺅزر کی مدد سے درختوں پر بھی ٹڈی دل کو تلف کیا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کسان/کاشتکار فیلڈ میں موجود ٹیموں کے ساتھ اپنا تعاون جاری رکھیں جبکہ انتظامیہ مکمل وسائل کے ساتھ ان کی اجناس کا تحفظ یقینی بنائے گی۔اجلاس میں بتایا گیا کہ ٹڈی دل کے خلاف جاری انسدادی کارروائیوں کے لئے سپرے وافر مقدار میں دستیاب ہے جبکہ کسانوں کو بھی محکمہ زراعت سپرے فراہم کر رہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ تحصیل صادق آباد اور رحیم یار خان میں کمبٹ آپریشن جاری ہے ۔
گرانفروشوں کے خلاف جاری کارروائیوں کے دوران پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے ضلع بھر میں1178 کاروباری مراکز میں اشیاءروز مرہ کی قیمتوں کا جائزہ لیا اور خلاف ورزی کے مرتکب47دکانداران کو1لاکھ17ہزار جرمانہ عائد کیا۔ڈپٹی کمشنر علی شہزا د کی ہدایت پر ضلع بھر میں گرانفروشوں کے خلاف کارروائیوں کا سلسلہ جاری تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز کی سربراہی میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹس اشیاءروزمرہ مقررہ نرخوں سے زائد پر فروخت کرنے والے عناصر کے خلاف بلا تفریق کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close