fbpx

رحیم یارخان میں ایم ایس ڈاکٹر آغا توحید کے خلاف ٹائر جلا کر احتجاج

رحیم یار خان: لاہور ہائی کورٹ بہاولپور بینچ کے شیخ زید میڈیکل کالج /ہسپتال کے ڈیلی ویجز ملازمین کو ریگولر کرنے کے احکامات کے برعکس شیخ زید ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر آغا توحید نے سینٹری ورکر ڈیلی ویجز ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کے زبانی احکامات صادر کر دیے

 شیخ زید میڈیکل کالج/ ہسپتال کے ڈیلی ویجز ملازمین بشمول سینٹری ورکرز نے لاہور ہائی کورٹ بہاولپور بینچ میں ریگولر ہونے کی رٹ دائر کر رکھی تھی جس پر معزز عدالت نےان ملازمین کو ریگولر کرنے کے احکامات صادر کر دیے اس پر ایم ایچ شیخ زید ہسپتال نے ہائیکورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہسپتال کا صفائی کا نظام ٹھیکے پر دے دیا اور ڈیلی ویجز ملازمین سینٹری ورکرز کو جن کو ہائیکورٹ ریگولر کرنے کے احکامات جاری کر چکی تھی ٹھیکیدار کے ماتحت کرنے کے احکامات جاری کر دیئے

اس پر ڈیلی ویجزملازمین سینٹری ورکر میں بے چینی کی لہر پیدا ہو گئی اور انہوں نے ہاسپٹل کے مین گیٹ پر احتجاج ریکارڈ کروایا احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے ڈیلی ویجزملازمین سینٹری ورکرز جن میں اللہ رکھا آکاش مسیح، ارشاد مسیح ،عمران الیشبہ ،عذرا ،نورین نے کہا کہ ہم عرصہ دس پندرہ سال سے ڈیلی ویجز سینٹری ورکر کا کام کر رہے ہیں اب جبکہ لاہور ہائی کورٹ نے ہمیں ریگولر کرنے کا حکم جاری کیا ہے

ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر آغا توحید ہمیں نوکری سے فارغ کر کے ٹھیکیدار کے حوالے کر رہے ہیں جو کہ سراسر زیادتی اور ناانصافی ہے انہوں نے کہا کہ یہ سراسر توہین عدالت ہے تمام ملازمین عدالت سے توہین عدالت کا نوٹس لینے کے لئے رجوع کریں گے انہوں نے نے کہا کہ وہ کسی صورت ٹھیکیدار کے ماتحت کام نہیں کریں گے انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان ،وزیراعظم پاکستان عمران خان، وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار، وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد، اور رحیم یار خان شہر کے حکومتی نمائندوں سے اس معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

انہوں نے کہا کہ ہم سے کرونا وارڈ میں ڈیوٹی کروا کراب ہمیں ٹھیکیدار کے حوالے کر رہے ہیں تاہم ایم ایس نے مذاکرات کے لیے احتجاجی ملازمین کو اپنے دفتر بلایا اور ملازمین کو قائل کرنے کی کوشش کی

جس پر تمام ملازمین سراپا احتجاج ہوئے اور کام چھوڑنے کی کال دے دی اگر مسئلہ حل نہ کیا گیا تو پورے ہسپتال وکالج کے سینٹری ورکر احتجاج پر مجبور ہو جائیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری اسپتال انتظامیہ پر عائد ہوگی آخر میں ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے جنرل سیکٹری خواجہ نعیم طارق نے ایم ایس سے مذاکرات کیے اور سوموار تک کا ٹائم دیا اگر معاملات حل نہ ہوئے تو مجبوراً وہ احتجاج پر مجبور ہوجائیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close