ممتاز احمد عرف ممتازبلا قتل کیس میں اور کون کون گرفتار ہو گا

رحیم یارخان پولیس کے اہلکارہیڈ کانسٹیبل ممتاز احمد عرف ممتازبلا قتل کیس میں ایس ایچ او مسلم ضیا کو حراست میں لے لیا گیامزید گرفتاریوں کا امکان،
تفصیل کے مطابق رحیم یارخان میں کچہ آپریشن کے دوران اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ملوث درجنوں گینگز کو پکڑنے والے رحیم یارخان کے بہادر پولیس اہلکارہیڈ کانسٹیبل ممتاز احمد کو 14جولائی 2019کو تین موٹر سائیکلوں پر سوار 9 افراد کی مسلح فائرنگ سے کوٹسبزل اڈہ پر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی دم توڑ گیا تھا۔

جس کا مقدمہ جان محمد عرف جانو ،جمیل احمد، تنویراحمد عرف احمدو،محمد تسلیم وغیرہ کے خلاف طاہر اقبال کی مدعیت میں درج کیا گیا ۔

پولیس کی جانب سے واقعہ کی انکوائری ہوئی تو ورثا نے اعلیٰ سطحی تحقیقات کا مطالبہ کیا ۔گزشتہ شب خصوصی تحقیقاتی ٹیم نے بہاولپور میں مسلم ضیا کو حراست میں لے لیا۔

توقع کی جارہی ہے کہ مسلم ضیا کی گرفتاری کے بعد ممتاز احمد کے قتل میں ملوث دیگر ملزمان کوبھی جلد گرفتاری عمل میں لائی جائیگی ، ممتازاحمد کے ورثا نے پولیس انکوائری پر اطمینان کا اظہار کیا اور ڈی پی او رحیم یارخان منتظر مہدی ،ایس پی انوسٹی گیشن کے تعاون کو سراہتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ دیگر ملزمان بھی جلد گرفتار ہونگے اور بغیر کسی دبائو کے انہیں کیفر کردار تک پہنچایا جائیگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »