fbpx

گنے اور کپاس کے بقایا جات کی ادائیگی میں تاخیر کیخلاف احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان

muttahida kisan mahaz rahim yar khan

رحیم یارخان : متحدہ کسان محاذ (MKM) نے گنے اور کپاس کے بقایا جات کی ادائیگی میں مہینوں کی تاخیر کیخلاف احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا، چینی کی قیمت کے مطابق گنے کا ریٹ 260 روپے فی 40 کلوگرام مقرر کرنے کا مطالبہ، بقایا جات کی ادائیگی کیلئے یکم رمضان المبارک کی ڈیڈلائن دیدی۔ تفصیل کے مطابق مختلف کاشتکار تنظیموں کے نئے مشترکہ پلیٹ فارم ایم کے ایم کا اہم اجلاس بزرگ کاشتکار لشکر خان کورائی کی زیرصدارت ترین کالونی رحیم یارخان میں منعقد ہوا جس میں احتجاجی تحریک کیلئے تمام کاشتکار تنظیموں کے ساتھ رابطے کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ جرات مند اور قربانیاں دینے والے کاشتکاروں کو اس نئے مشترکہ پلیٹ فارم کے ذریعے آگے لایا جائے گا اور کاشتکاروں کے کپاس اور گنے کے کروڑوں روپے روک لینے والی شوگر ملوں اور کاٹن جننگ فیکٹریوں کے سامنے احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔ اجلاس میں پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن اور پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن کو یکم رمضان المبارک کی ڈیڈلائن دیتے ہوئے تمام کاشتکار تنظیموں کی طرف سے مشترکہ وارننگ لیٹر بھجوانے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ جن شوگر ملز اور کاٹن جننگ فیکٹریوں نے کاشتکاروں کے کروڑوں، اربوں روپے کے بقایا جات روک رکھے ہیں ان کیخلاف کارروائی کیلئے نیب کو بھی درخواستیں بھجوائی جائیں گی۔ اجلاس میں ملک میں چینی کی قیمت میں مصنوعی اضافے کی مذمت کیلئے قرارداد بھی منظور کی گئی جس میں یہ کہا گیا ہے کہ موجودہ شوگر سیزن کے آغاز میں چینی کی قیمت 51 روپے فی کلوگرام تھی جونہی کاشتکاروں کا گنا ختم ہوا ہے شوگر ملز کارٹل نے چینی کی قیمت بڑھا کر 61 روپے فی کلوگرام کردی ہے اور رمضان المبارک کی آمد پر یہ قیمت مزید بڑھا کر 65 روپے فی کلوگرام کرنے کی پلاننگ کی جارہی ہے۔ ایم کے ایم کے کارکنوں اور رہنماﺅں نے وزیراعظم عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ، چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال، گورنر پنجاب چودھری محمد سرور، وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار، گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے اپیل کی ہے کہ ملک میں چینی کی بھرپور پیداوار کے ہوتے ہوئے شوگر ملز کارٹل کو اس کی قیمتوں میں من مانے اضافے سے روکا جائے اور ایکسپورٹ پر بھی ہنگامی پابندی لگاتے ہوئے مارکیٹ ریٹ کے مطابق اسی ہفتے اگلے برس کیلئے گنے کی امدادی سرکاری قیمت خرید کا اعلان کیا جائے کیونکہ ملکی آئین اور قانون کے مطابق ہر فصل کی امدادی قیمت کا اعلان اس کی کاشت کے موقع پر کیا جانا ناگزیر ہے۔ ایم کے ایم کے رہنماﺅں کا کہنا ہے کہ چینی، شیرے اور بگاس کے موجودہ مارکیٹ ریٹس کے مطابق گنے کی امدادی قیمت 260 روپے فی 40 کلوگرام مقرر کی جائے اور اس حوالے سے حکومت دو ٹوک اعلان کرے کہ شوگر ملز جس ریٹ پر پورا سال چینی بیچیں گی کرشنگ سیزن میں گنے کی قیمت کا اعلان اس کے مطابق کیا جائے گا۔

muttahida kisan mahaz rahim yar khan

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »