نورالحسن بیماری سے قبل کیا کام کرتے تھے

لاہور کے ایک پرائیویٹ ہسپتال میں زیرعلاج تقریباً53 سالہ نورالحسن  موٹاپے سے نجات کے آپریشن کے دو ہفتے بعد انتقال کرگئے ہیں، ، ان کا وزن 330 کلوگرام ہ، وہ گزشتہ 10 سال سے اس بیماری میں مبتلا تھےاوران کا موٹاپا بڑھتا جارہاتھا۔ انہوں نے آرمی چیف جنرل قمر جوید باجوہ صاحب سے اپیل کی تو آرمی چیف کی جانب سے انہیں آرمی کے ہیلی کاپٹر میں لاہور منتقل کیا گیا جہاں ان کا آپریشن ہوا اور وہ تندرست ہورہے تھے لیکن گزشتہ تین دنوں سے ان کو سانس کی تکلیف تھی جس کی وجہ سے انہیں آئی سی یو میں منتقل کیا گیا تھا۔ ہسپتال انتظامیہ کے مطابق ہسپتال میں ایک خاتون کے انتقال کے  بعد ان کے لواحقین نے توڑ پھو ڑ کی جس کی وجہ سے نورالحسن سمیت دو زیرعلاج مریض چل بسے ۔ڈاکٹر معاذ کے مطابق ہسپتال میں تو ڑپھوڑ اور ہنگامہ آرائی کی وجہ سےتین گھنٹے تک نورالحسن کو کوئی نہیں دیکھ سکا، ڈر اور خوف  کی وجہ سے انہیں ہارٹ اٹیک ہوا جو جان لیوا ثابت ہوا۔ لاہور پہنچننے کے بعد اور آپریشن سے قبل  نورالحسن نے ڈیلی پاکستان کے ساتھ ا پنے آخری انٹر    ویومیں کیا کچھ کہاتھا ؟ آپ بھی دیکھئے اس ویڈیو میں۔۔۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »