fbpx

عمران خان حکومت قول و فعل میں تضاد ہے ،پرشوتم رامانی

pakistan hindu council rahim yar khan news

 پاکستانی ہندوؤں کی ملک گیر نمائندہ تنظیم پاکستان ہندوکونسل نے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کے چیئرمین کیلئے ڈاکٹر عامر احمد کی تعنیاتی کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے وزیراعظم سے نظرثانی کا مطالبہ کیا ہے، صدر گوپال خامانی اور سیکرٹری جنرل پرشوتم نے اپنے مشترکہ بیان سپریم کورٹ اور عالمی عدالت انصاف میں جانے کا عندیہ بھی دے دیا۔پاکستان ہندوکونسل کا کہنا ہے کہ عمران خان ملک بھر میں امید کی کرن بن کر ابھرے تھے، عوام بالخصوص غیرمسلم اقلیتی کمیونٹی کو ان سے بہت زیادہ توقعات وابستہ تھیں، افسوس کا مقام ہے کہ وزیر اعظم عمران خان بھی ماضی کے حکمرانوں سے مختلف ثابت نہ ہوئے اور اپنی وقتی حکومت کی خاطر عوام سے کیے گئے تمام وعدے بھُلا بیٹھے۔ پاکستان ہندوکونسل کے مطابق ملک بھر میں 1288مندر، 522گوردواروں اور ساڑھے سات سو ارب روپے کی ہندو پراپرٹی کی دیکھ بھال کیلئے قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کی سربراہی کسی قابل پاکستانی ہندو شہری کو سونپی جانی ضروری ہے۔صدر گوپال خامانی اور سیکرٹری جنرل پرشوتم نے اس امر پر تعجب کا اظہار کیا کہ بورڈ کے ممبران کیلئے مسلم اور کرسچیئن کمیونٹی کو منتخب کیا گیا ہے جبکہ انکا متروکہ وقف املاک پراپرٹی سے کوئی لینا دینا نہیں، پاکستان ہندوکونسل نے مطالبہ کیا ہے کہ متروکہ وقف املاک بورڈ کے معاملات احسن انداز میں چلانے کیلئے ہندو اور سکھ کمیونٹی کو نظرانداز کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے، اس حوالے سے اپنے مشترکہ بیان میں پاکستان ہندو کونسل کے اعلیٰ عہدے داران نے انڈیا اور اسرائیل کا بھی حوالہ دیا جہاں مسلمان اقلیت کی جائیداد کی دیکھ بھال کیلئے وقف کا ادارہ مقامی مسلمان شہریوں کی سربراہی میں فعال ہے۔گزشتہ برس پاکستان ہندو کونسل کے سرپرست اعلیٰ ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی کی پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کے موقع پر عمران خان نے اقلیتی ہندو کمیونٹی کے تحفظات دور کرنے کیلئے قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا چیئر مین ہندو کمیونٹی سے لگانے کا عندیہ دیا تھا جس پر ملک بھر کی ہندو کمیونٹی میں خوشی کی لہر دوڑ گئی تھی، پاکستان کے پہلے وزیراعظم لیاقت علی خان اور بھارتی وزیراعظم جواہر لال نہرو کے درمیان سمجھوتے میں اس امر پر اتفاق ہوا تھا کہ انڈیا میں وقف ادارے کی سربراہی انڈین مسلمان اور پاکستان میں پاکستانی ہندو شہری کے سپرد کی جائے گی، پاکستان ہندو کونسل نے افسوس کا اظہار کیا کہ موجودہ حکومت نے سپریم کورٹ کے بینچ نمبر ون کے واضح احکامات اور 19جون کے تفصیلی فیصلے برائے تحفظ اقلیت کی دھجیاں اڑاتے ہوئے ایک بار پھر محب وطن ہندو کمیونٹی کو نظرانداز کردیا ہے، پاکستان ہندو کونسل کے مطابق پاکستان ہندو کمیونٹی کیلئے دھرتی ماتا کا درجہ رکھتا ہے لیکن پاکستان تحریک انصاف قول و فعل میں تضاد اور عوام سے وعدے پورے نہ کرسکنے کے سبب عوام میں مقبولیت روزبروز کھوتی جارہی ہے۔پاکستان ہندوکونسل کے صدر گوپال اور سیکرٹری جنرل پرشوتم نے وزیراعظم عمران خان سے قومی وقف متروکہ املاک بورڈ کیلئے فوری طور پر ہندو چیئرمین کی تعنیاتی کا مطالبہ کیا ہے بصورت دیگر پاکستان ہندوکونسل سپریم کورٹ اور عالمی عدالت انصاف کا دروازہ کھٹکھٹانے کا حق محفوظ رکھتی ہے

pakistan hindu council rahim yar khan news

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close