پولیس پارٹی پر فائرنگ سب انسپکٹر اور کنسٹیبل شہید

Police Martyr

رحیم یارخان : حوالگی کیس میں عدالتی کے حکم پر کارروائی کرنے والی پولیس پارٹی پر فائرنگ سب انسپکٹر اور کنسٹیبل شہید ۔

تھانہ شیدانی کی پولیس چوکی بنگلی کے انچارج سب انسپکٹر محمد ارشد چھٹہ کو ایک حوالگی کیس کے سلسلہ میں ایڈیشنل سیشن جج لیاقت پور سے چار/ پانچ سالہ صغراں بی بی ولد نصراللہ جورانی کو برآمد کر کے عدالت میں پیش کرنے کے احکامات ملے۔
جس پر نفری کے ہمراہ دریائے سندھ کے کنارے آباد ملزمان غلام مصطفی وغیرہ تک پہنچنے کے لئے دریا میں کشتی پر سفر کیا اور مدعی نصراللہ جورانی کی نشاندہی پر ان کے گھر واقع موضع گدپورپہنچ گئے ۔
جہاں سے صغراں بی بی کو باحفاظت بازیاب کر لیا گیا اور اسے عدالت میں پیش کرنے کی غرض سے ہمراہ لے کر واپسی کا سفر شروع کیا تو ملزمان غلام مصطفی ، عبداللہ اقوام جورانی اور ان کے 10/12 کس نامعلوم مسلح ساتھی ملزمان نے پولیس پارٹی کی کشتی پر فائرنگ کر دی ،
فائرنگ کی زد میں آکر سب انسپکٹر محمد ارشد چھٹہ اور کنسٹیبل صادق حسین موقع پر شہید ہوگئے ۔جبکہ مدعی نصراللہ جورانی شدید زخمی ہو گیا ۔
واقع کی اطلاع پاکر ڈی پی او عمر سلامت بھی موقع پر پہنچ گئے اور بھاری نفری کے ساتھ حملہ آور قاتل و مفرور ملزمان کی تلاش شروع کر دی ۔
دریں اثناء شہداء کے شیخ زید ہسپتال میں پوسٹ مارٹم مکمل ہونے کے بعد پولیس لائن میں نماز جنازہ کا انعقاد کیا گیا
جس میں آر پی او بہاولپور عمران محمود ، کمانڈنٹ چولستان رینجرز اسماعیل ، ڈی پی اوعمر سلامت ، دی سی جمیل احمد جمیل ، ایس پیز رانا محمد اشرف ، ایاز عمرانی ، سرکل پولیس افسران ، ایس ایچ اوز ، رینجرز اہلکاروں ، پولیس افسران و اہلکاروں ، شہداء کے ورثاء ، پی ٹی آئی کے رہنماء شمیل مرزا ، دفاع پاکستان فورم کے میاں آصف لنگرا ، حاجی خادم حیسن ، میاں آصف ستار ، چیئرمین انجمن تاجران ریلوے روڈ ، بانو بازار اور پھول مارکیٹ چوہدری محمد بوٹا طاہر و دیگر تاجران، وکلاء ، ڈاکٹرز سمیت سول سوسائٹی سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد نے نماز جنازہ میں شرکت کی ۔
پولیس کے چاک و چوبند دستے نے شہداء کو سلامی پیش کی ۔ اس موقع پر ڈی پی او عمر سلامت نے بتایا کہ ملزمان کا تعاقب جاری ہے اور انہیں ہر صورت اس لا قانونیت کی سزا بھگتنا ہو گی ۔

Police Martyr

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close