fbpx
پولیسرحیم یارخان

رحیم یارخان میں 30شہداء پولیس کے گھروں میں راشن بیگزاور عیدی پہنچائی گئی

رحیم یارخان :30شہداء پولیس کے گھروں میں راشن بیگزاور عیدی پہنچا دی گئی۔ سرکل پولیس افسران اور ایس ایچ اوز شہداء کے گھروں میں گئے راشن اور نقدی پیش کی۔

 انسپکٹر جنرل آف پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے پنجاب بھر کے سی سی پی اوز، سی پی اوز اور ڈی پی اوز کو ہدایات جاری کی تھی کہ وہ بیس مئی تک ہر شہید کے گھر میں عیدالفطر کے لیے مقررہ معیار کے مطابق راشن بیگز اور نقد عیدی پہنچائیں۔

جس پر رحیم یارخان میں ڈی پی او منتظر مہدی نے 30 شہداء پولیس شہید انسپکٹر تبسم حسین ورک، سب انسپکٹر ارشد علی،سب انسپکٹرمحمد ارشد، اے ایس آئیز غلام علی، نذیر احمد، حسن محمود غوری، اللہ بچایا، ہیڈ کانسٹیبلان بشیر احمد، خورشید احمد، کانسٹیبلان محمد ریاض احسن، ندیم اختر،محمد اقبال،شفقت علی،داؤد احمد،سرفراز احمد،محمد رشید،حبیب احمد،عبدالغفور،محمد اسلم،محمد ارشد،محمد بوٹا،محمد اکرم،محمد ادریس،محمد اختر،محمد طارق،لیاقت علی،محمد مجاہد،محمد جمیل شاکر،صادق حسین اور شہیدپولیس رضاء کارمحمد یعقوب کے گھروں میں ایس ڈی پی اوز جاوید اختر جتوئی،رانا اکمل رسول نادر،حافظ خضر زمان،فرخ جاوید،اسلم خان اور مقامی ایس ایچ اوز اور انچارج ہائے پولیس چوکیات نے راشن بیگزاور نقدی کی صورت میں عیدی شہداء کے ورثاء کو پیش کی اورانکے صبر واستقلال کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ان سے دیگرحل طلب مسائل کے بارہ میں پوچھا اور کہا کہ شہداء پولیس فیملی کا روشن باب ہیں جنکی قربانیوں کی مرہون منت آج معاشرہ میں امن و امان قائم ہے اور جرائم کی سرکوبی ممکن ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہداء کے لواحقین کا محکمہ پولیس پر پہلے سے بڑھ کر حق ہے وہ جب چاہیں ہمیں طلب کر سکتے ہیں محکمہ پولیس کسی بھی موقع پر شہداء کے گھر والوں کو تنہا نہ چھوڑنے کے پختہ عزم پر کار بند ہے۔
 شہید غلام محی الدین
ڈی ایس پی پیٹرولنگ پولیس زاہد مجید نے کہا ہے کہ شہید غلام محی الدین نے دہشت گردوں کے خلاف لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کر کے ملک و قوم کی حفاظت کی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پٹرولنگ پولیس رحیم یارخان کے ہیڈ کانسٹیبل غلام محی الدین کے گھر جا کر ان کی والدہ اور دیگر اہل خانہ کو عیدالفطر کے لیے تحائف پیش کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہماری جانیں، مال اور وفاداریاں اس ملک و قوم اور عوام کے ساتھ کئے ہوئے عہد کے لیے ہیں۔ غلام محی الدین نے لاہور پولیس ٹریننگ سکول پر ہونے والے دہشت گردوں کے حملے کو ناکام بنانے کے لیے اپنی جان کا نذرانہ پیش کیا۔ جس پر ملک و قوم، محکمہ پولیس اور اہل خانہ وعلاقہ کو فخر ہے ہم کسی بھی صورت حال میں غلام محی الدین شہید کی فیملی کے ساتھ ہیں۔

اندھے قتل کی واردات

رحیم یارخان :آباد پور  پولیس نے اندھے قتل کی واردات آدھے  گھنٹے  میں ٹریس کر کے فوری چار ملزمان کو گرفتار کر لیے۔

ان خیالات کا اظہار ایس پی انوسٹی گیشن فراز احمد نے ڈی ایس پی صدر سرکل رانا اکمل رسول نادر، ایس ایچ او آباد پور چوہدری محمد یونس کے ہمراہ تفصیلات بتاتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ تھانہ آباد پور پولیس کو 19 مئی صبح ساڑھے چھ بجے اطلاع موصول ہوئی کہ نورالدین ولد حاجی احمد بستی حاجی قائم دین موضع کڑمان سنگھ بعمری 75/80 سالہ بزرک کو گھر کے قریب فصل کماد میں نامعلوم اشخاص کو قتل کر کے پھینک گئے ہیں

جس پر ایس ایچ او چوہدری محمد یونس اور سب انسپکٹر مزمل اسحاق  موقع پر پہنچے اور ضروری قانونی کارروائی کے لیے کرائم سین ٹیم کو بلوا لیا اور نعش کو ہسپتال منتقل کر کے ابتدائی تفتیش کا اغاز کر دیا۔

حالات و واقعات کا جائزہ لینے پر کچھ ایسے شواہد ملے کہ قاتل قریبی رشتہ دار ہی ہو سکتا ہے کیونکہ مقتول کی کسی سے دشمنی نہ تھی۔ کچھ افراد کو زیر تفتیش لانے پر مقتول کی لے پالگ بیٹی کا بیٹا جمیل شیدی پر مقتول کو بہو تسلیم سے ناجائز تعلقاتکا شبہ  تھا اور مقتول نورالدین اسے گھر نہ آنے دیتا تھا

اس رنجش پر جمیل شیدی نے نورالدین کو راستے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا اور اپنے دیگر ساتھیوں ملزمان طاہر، فیض اللہ اور محمد رفیق جو کہ تسلیم بی بی کے ساتھ ناجائز تعلقات رکھتے ہیں کی مدد سے نورالدین کو چاقو اور سوٹوں کے وار کر کے موت کی گھاٹ اتارا ہے۔

 جس کا انکشاف ملزم جمیل شیدی نے اقرار جرم کر لیا اور اس طرح پولیس نے دو گھنٹوں کے اندر اس اندھے قتل کو ٹریس کر کے ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے۔ ڈٖی ایس پی رانا اکمل رسول نادر نے کہا کہ اس قتل کیس کو ٹریس کرنے میں سب انسپکٹر مزمل اسحاق کا خاص کردار ہے نوجوان پولیس آفیسر نے قابل قدر کام کیا۔ جس پر ایس پی نے کہا اس سلسلہ میں ڈی پی او منتظر مہدی، آر پی او بہاولپور زبیر دریشک اور آئی جی آف پولیس پنجاب شعیب دستگیر بھی پولیس پارٹی کو انعامات دیں گے۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Live Updates COVID-19 CASES
Translate »
Close
Close