fbpx

پولیو سے پاک پاکستان ہمارا مشن ہے,ڈپٹی کمشنر علی شہزاد

رحیم یار خانڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے 16دسمبر سے شروع ہونیوالی انسداد پولیو مہم کی سو فیصد کامیابی کے لئے جامع اقدامات کئے ہیں تاہم انسداد پولیو کا پیغام عام کرنے کے لئے تمام مکاتب فکر کو اپنا کردار اد اکرنا ہو گا تاکہ مہم کے دوران پانچ سال سے کم عمر کوئی بچہ حفاظتی ویکسین سے محروم نہ رہے۔
انہوں نے یہ بات ایم پی اے چوہدری آصف مجید کے ہمراہ پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کی حفاظتی ویکسین کے دو قطرے پلاتے ہوئے ضلع میں پولیو مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کہی۔
ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(جنرل)شیخ محمد طاہر، سی ای ا وہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا، ڈی ایچ او ڈاکٹر حسن خان، روٹری کلب کے ممتاز بیگ سمیت دیگر متعلقہ افسران بھی اس موقع پر موجو دتھے۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ پولیو سے پاک پاکستان ہمارا مشن ہے اور انشاءاللہ ضلع کو آئندہ بھی پولیو فری رکھنے کےلئے جذبوں میں کمی نہیں آنے دیں گے۔
ایم پی اے چوہدری آصف مجید نے کہا کہ حکومتی سطح پر پولیو کے خاتمے کےلئے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار تمام تر اقدامات کر رہے ہیں اور ا س مہم کی نگرانی کےلئے صوبائی کابینہ سمیت اعلیٰ افسران کو ذمہ داریاں تفویض کی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ پولیو سے بچاﺅ کے لئے حفاظتی قطرے پلوانے کا میسج گراﺅنڈ لیول تک پہنچائینگے اس کے لئے تمام عوامی نمائندگان اور شہری اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے۔سی ای او ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاو انے بتایا کہ رواں مہم سال کی آخری سرگرمی ہے جس میں9لاکھ55ہزار پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کی حفاظتی ویکسین پلائی جائے گی۔
 
رحیم یار خان سیکرٹری آثار قدیمہ و لائبریری طاہر یوسف نے ڈپٹی کمشنر آفس میں پرائس کنٹرول کے حوالہ سے منعقدہ اجلا س کی صدارت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب حکومت وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر گرانفروشی، ذخیرہ اندوزی، اشیاءخورونوش میں ملاوٹ کی روک تھام کے خلاف مہم شروع کئے ہوئے ہے جس کی مانیٹرنگ کے لئے وزیر اعلیٰ پنجاب نے صوبائی کابینہ سمیت اعلیٰ انتظامی افسران کو ذمہ داریاں تفویض کی ہیں۔
ڈپٹی کمشنر علی شہزاد، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(جنرل)شیخ محمد طاہر، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(فنانس اینڈ پلاننگ) محمد طیب خان، چاروں تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز اور ضلع ہذا کے پرائس کنٹرول مجسٹریٹس اجلاس میں شریک تھے۔طاہر یوسف نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ مصنوئی مہنگائی پر قابو پانے اور اشیاءضروریہ کی قیمتوں، طلب ورسد کی موثر نگرانی کےلئے مربوط حکمت عملی تیارکرکے فوری عملدرآمد یقینی بنائے۔
انہوں نے کہا کہ مصنوعی مہنگائی کو قابومیں کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات ضروری ہیں، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس بڑی مارکیٹوں اور تاجروں کی کڑی مانیٹرنگ کریں۔انہوں نے کہاکہ آٹا808روپے 20کلوگرام بیگ مارکیٹ میں دستیاب ہونا چاہیے اس ضمن میں فلور ملز اور مارکیٹ کی تسلسل کے ساتھ مانیٹرنگ کریں۔انہوں نے محکمہ فوڈ کو ہدایت کی کہ وہ افسران آٹا کی کوالٹی کو چیک کریں جبکہ اس امر کو بھی یقینی بنایا جائے کہ فلور ملز مالکان پوری تعداد میں آٹا پسائی کرکے مارکیٹ کو فراہم کریں اس کے لئے فلور ملز کا کوٹہ اور بجلی میٹر کو روزانہ کی بنیاد پر چیک کریں۔
انہوں نے ضلع بھر میں موجود کولڈ سٹوریج کی تعداد اور وہاں موجود سامان کا ڈیٹا بھی مرتب کرنے کی ہدایت کی۔انہوں نے کہا کہ تمام پرائس کنٹر ول مجسٹریٹس ایک ٹیم بن کر کام کریں حکومتی اقدامات اور آپ کی محنت کے ثمرات عوام تک پہنچنے چاہیے۔
ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے بتایا کہ ضلع میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی کارکردگی روزانہ مانیٹر کی جا رہی ہے، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کا ہدایات ہیں کہ وہ تسلسل کے ساتھ مارکیٹس کا وزٹ کریں۔ضلع کے تمام چھوٹے بڑے کاروباری مراکز پر حکومتی ہدایات کے مطابق ریٹ لسٹیں نمایاں جگہوں پر آویزاں ہیںجس کی سختی سے مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔
انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ہدایت پر چاروں تحصیلوں کی سبز ی و فروٹ منڈیوں میں کسان پلیٹ فارم فنکشنل ہیں جہاں پرکسان مقامی سطح پر کاشت کی جانے والی سبزی و پھل بغیر کسی سرکاری فیس اور ایجنٹ کے کمیشن فروخت کر تے ہیں۔پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نا صرف فلور ملز بلکہ مارکیٹ میں بھی آٹا کی دستیابی کو چیک کر رہے ہیں او رکولڈ سٹوریج کے حوالہ سے تما م تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ اپنی تحصیلوں میں موجود کولڈ سٹور اور دستیاب سامان کاریکارڈ مرتب کریں۔
انہوں نے کہا کہ ضلع کی آبادی کے لحاظ سے اشیاءکی طلب و رسد کے حوالہ سے ضلعی سطح پر ایک مفصل ڈیٹا بیس تیار کیا جا رہا ہے جس میں سابقہ سالوں کا ریکارڈ بھی شامل کیا جائے گا اس ڈیٹا سے اشیاءکی طلب و رسد کے حوالہ سے رہنمائی حاصل ہو گی۔
انہوں نے کہا کہ مارکیٹ کمیٹی کے حکام کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ بھی روزانہ کی بنیاد پر اپنا ڈیٹا کمپیوٹرائزڈ کریں۔دریں اثناءسیکرٹری آثار قدیمہ پنجاب نے انسداد ڈینگی کے حوالہ سے منعقدہ اجلا س کی صدارت کرتے ہوئے ہدایات جاری کیں کہ انسداد ڈینگی سرگرمیوں میں کمی نہیں آنی چاہیے اسی جذبے کے ساتھ ڈینگی کی انسدادی کارروائیاں جاری رکھیںتاکہ مستقبل میں پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔سی ای ا وہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا نے انسداد ڈینگی کے حوالہ سے مختلف محکموں کی کارروائیوں بارے بریفنگ دی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »