fbpx

21ستمبر2020ءسے شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم کے انتظامات کا جائزہ

رحیم یار خان:ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے ہدایت کی ہے کہ تمام متعلقہ محکمے باہمی روابط کو مزید موثر بناتے ہوئے انسداد پولیو مہم کی کامیابی کے لئے مربوط حکمت عملی کے تحت کام کریں پانچ سال سے کم عمر کا کوئی بچہ حفاظتی قطرے پینے سے محروم نہ رہے۔
یہ ہدایات انہوں نے 21ستمبر2020ءسے شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم کے انتظامات کا جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کیں۔
اجلاس میں ڈی ایچ او ڈاکٹر زبیر عالم سمیت محکمہ صحت، ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن، ایجوکیشن، زراعت ، ٹریفک پولیس سمیت دیگر تعاون کرنے والے اداروں کے افسران موجو دتھے۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ضلع میں انسداد پولیو مہم کے دوران غفلت برداشت نہیں کی جائے گی او رپولیو ٹیموں کی کارکردگی کی کڑی مانیٹرنگ جار ی رہے گی تاکہ مطلوبہ اہداف کا حصول اور ضلع کی پولیو فری حیثیت کو برقرا ررکھا جائے۔
انہوں نے کہا کہ یہ مہم سابقہ مہمات سے اہمیت کی حامل ہے ضلع کے نزدیکی اضلاع میں پولیو کیسز رپورٹ ہوئے ہیں تاہم کسی قسم کے رسک کی کوئی گنجائش موجود نہیں۔
ڈبلیو ایچ او کے نمائندہ نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ دنیا کہ صرف دو ممالک پاکستان اور افغانستان پولیو سے متاثرہ ہیں اور پاکستان میں رواں برس64کسیز رپورٹ ہوئے ہیں
جس میں سے 8پولیو کے کیسز صوبہ پنجاب سے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پولیو وائرس ہر جگہ موجود ہے رحیم یار خان کے نزدیکی اضلاع بہاولپور کی تحصیل احمد پور شرقیہ سے بھی پولیو کیس مثبت آیا ہے
جس کے باعث اس ماہ شروع ہونے والی پولیو مہم کی اہمیت میں اضافہ ہوا ہے اور ہمیں مزید محنت اور لگن سے مطلوبہ اہداف حاصل کرنا ہو ں گے۔
اجلاس میں محکمہ صحت کی جانب سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ سابقہ مہم میں تمام اداروں نے مثالی کام کیا اور آئندہ بھی اسی جذبے سے کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ضلع کو پولیو فری رکھا جائے۔
انہوں نے کہا کہ 21ستمبر تا25ستمبر تک ضلع میں پولیو مہم جاری رہے گی اور 9لاکھ55ہزار سے زائد پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کی حفاظتی ویکسین کے قطرے پلائے جائیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »