ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف مظاہرین کاسٹی پل بلاک کرکے احتجاجی دھرنا

رحیم یارخان22روزقبل تاجرکوقتل کرنے والے ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف مظاہرین کاسٹی پل بلاک کرکے احتجاجی دھرنا

ایس ایچ اوبی ڈویژن کومعطل کرکے غیرجانبدارانکوائری افسرسے تفتیش کرانے اورملزمان کوگرفتارکرنے کامطالبہ‘
دھرناپانچ گھنٹے جاری رہنے کے بعد پولیس کی جانب سے انصاف فراہم کرنے کی یقین دہانی پرختم ہوا۔
سخی سرورکالونی کے رہائشی تاجرمحمدافتخارمقتول کے ورثاء نے عبدالصمدچوہدری‘ راناراحیل احمدخان ودیگرکی قیادت میں احتجاجی دھرناسٹی پل پردیاگیاجس میں سینکڑوں افرادنے شرکت کی.

مظاہرین نے پولیس تھانہ بی ڈویژن کے خلاف بھرپورنعرے بازی کی

متاثرین کا کہنا تھا کہ  پولیس بی ڈویژن نے 22روزگزرجانے کے باوجودافتخاراحمدکوقتل کرنے والے ملزمان کوگرفتارکرنے کی بجائے مبینہ طور پربھاری رشوت وصول کرکے ان کی سرپرستی شروع کردی ہے اورانہیں انصاف فراہم کرنے سے انکاری ہےجبکہ وہ دربدرکی ٹھوکریں کھانے پرمجبورہیں
مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پرایس ایچ اوبی ڈویژن کومعطل کرکے غیرجانبدارافسرکوتفتیش مقدمہ پرذمہ داری سونپی جائے اورملزمان کوگرفتارکرنے کے ساتھ ساتھ پولیس افسران وملازمین کی بھی انکوائری کی جائے جن کی موجودگی میں افتخاراحمدکوملزمان نے قتل کیا‘
مظاہرین نے پانچ گھنٹے سے زائددھرنادئیے رکھاجس پراے ایس پی صدرسرکل سلیم شاہ‘ ڈی ایس پی سٹی سرکل فیاض پنسوتہ نے مظاہرین سے مذاکرات کیے لیکن ناکام رہے بعدازاں ایس پی انوسٹی گیشن فرازاحمدکی جانب سے انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی پرمظاہرین پرامن طور پرمنتشرہوگئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »