fbpx

سی ڈویژن پولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

protest against rahim yar khan police c division

رحیم یار خان:عباسیہ ٹائون فارچونرحادثہ میں جاں بحق اورزخمی ہونے والے افرادکے لواحقین کاپولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ‘
پولیس پربااثرفارچونروکارمالکان کی مکمل سرپرستی کرنے کاالزام‘ حادثہ کے درج مقدمہ میں ڈرائیورنامزدکرکے مالکان سے مبینہ رشوت لے کران کے نام نکالے گئے‘ پولیس جاں بحق افراداورزخمیوں کے ورثاء کوصلح کے لیے دھمکانے لگی‘ متاثرین کااعلی حکام سے فوری نوٹس لے کرانصاف فراہم کرنے کامطالبہ۔
چندروزقبل عباسیہ ٹائون میں فارچونراورکارکی ریس سے پیش آنے والے خونی حادثے میں 3افرادجاں بحق جبکہ 4افرادزخمی ہوئے جس پرپولیس نے مقدمہ درج کرکے ڈرائیورافتخارکوگرفتارکیاتاہم متاثرین کوانصاف نہ مل سکااس سلسلہ میں حادثے میں جاں بحق اورزخمی ہونے والے افرادکولواحقین پروفیسرزاہدمجید‘ محمدارشاد‘ عبدالوحید‘ گلزاراحمدودیگرنے پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے میڈیاکوبتایاکہ پولیس سی ڈویژن نے حادثہ کی گاڑیوں کے مالکان کوبچانے کے لیے مقدمہ درج کرتے وقت مبینہ رشوت لے کران کے نام ختم کیے اورڈرائیورکونامزدکیابعدازاں متاثرین کوانصاف فراہم کرنے کی بجائے پولیس نے الٹاصلح کے لیے دھمکاناشروع کردیااوردوہفتے گزرنے کے باوجودہسپتال میں زیرعلاج زخمیوں اورجاں بحق ہونے والے افرادکوکوئی ریلیف فراہم نہ کیاجاسکاہے اورزخمی علاج معالجہ کے لیے پریشانی میں مبتلاہے اورپولیس کاجارحانہ رویہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرتاہے انہوں نے پولیس کے خلاف بھرپورنعرے بازی بھی کی‘ انہوں نے اعلی حکام سے مطالبہ کیاکہ فوری انصاف فراہم کیاجائے۔

protest against rahim yar khan police c division

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close