fbpx

رحیم یارخان میں سینٹری ورکرزاور ڈیلی ویجزملازمین کا دوسرے روز بھی احتجاج مظاہرہ

رحیم یار خان،:شیخ زید میڈیکل کالج/ ہسپتال کے سینٹری ورکرزاور ڈیلی ویجزملازمین نے صفائی کا نظام ٹھیکے پر دئے جانے کے خلاف دوسرے روز بھی احتجاج کیا احتجاج میں کثیر تعداد میں ڈیلی ویجزملازمین بشمول خواتین ملازم نے شرکت کی احتجاجی ملازمین اپنے مطالبات ریگولر کیے جانے،

ملازمین کا معاشی قتل کئے جانے ،اور ٹھیکے داری نظام کے خلاف پلے کارڈ بھی اٹھا رکھیں تھے۔ احتجاجی ملازمین نے شیخ زید ہسپتال کے مین گیٹ کو بند کر دیا اور ہسپتال کے سامنے ٹائر جلا کر احتجاج۔ احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن شیخ زید میڈیکل کالج/ہسپتال جنرل سیکرٹری پنجاب پاکستان ہیلتھ سپورٹ سٹاف آرگنائزیشن عمران ارشد نے کہا کہ وہ تمام ڈیلی ویجز ملازمین کو ریگولر کروا کرہی دم لیں گے جن کا ہائی کوٹ ریگولر کرنے کا فیصلہ دے چکی ہے

ڈیلی ویجزملازمین
ڈیلی ویجزملازمین

انہوں نے کہا کہ ہائی کورٹ کے فیصلے کے برعکس ہسپتال انتظامیہ کا ان ملازمین کو ٹھیکے داری نظام کے ماتحت کرنا کورٹ کے آرڈرز کی حکم عدولی ہے اور انصاف کا قتل کرنے کے مترادف ہے محمد علی ملک چیف آرگنائزر ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن نے احتجاجی ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہائی کورٹ کے فیصلے میں سپریم کورٹ کے واضح احکامات درج ہے کہ ان ڈیلی ویجز ملازمین کو ریگولر کر دیا جائے

انہوں نے کہا کہ تمام ڈیلی ویجز ملازمین کے ریگولر ہونے تک ہم اپنی تحریک جاری رکھیں گے انہوں نے کہا کہ ملک کرونا وبا کی لپیٹ میں ہے اور اس موقع پر ان ملازمین کوٹھکیداری نظام کے ماتحت کرنا سراسر زیادتی ہے جو ملازمین اپنی زندگی کے دس دس پندرہ، پندرہ سال ادارے کی خدمت کر چکے ہیں آخر میں گرینڈہیلتھ الائنس کے چیئرمین ڈاکٹر شبیر احمد وڑائچ نے کہا کے ہسپتال انتظامیہ ہوش کے ناخن لے اور ہائی کورٹ کے واضح احکامات کو نظر انداز نہ کرے

انہوں نے کہا کہ سینٹری ورکرز، وارڈ بوائے، پیرامیڈکس، بیلتھ سپورٹ سٹاف،سٹاف نرسز اور ڈاکٹر اسٹاف سمیت تمام ہیلتھ سٹاف کرونا جیسی عالمی وبا میں جہاں پر یہ وائرس لاکھوں زندگیوں کو ختم کر چکا ہے فرنٹ لائن کے طور پر کام کر رہے ہیں اور کسی محکمے کا کوئی عملہ ڈائریکٹ ان کرونا مریضوں سے متاثر نہیں ہو رہا جتنا ہیلتھ کا عمل متاثر ہورہا ہے

اور اپنی جان کے نذرانے بھی پیش کر رہا ہے انہوں نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ تمام ملازمین چاہیں کلاس فور ہوں کلاس تھری یا پھر گزٹیڈسٹاف ہو سب کو ریگولر کیا جائے جس پر سپریم کورٹ کے واضح احکامات بھی موجود ہے

انہوں نے کہا کہ وہ ایسوسی ایشن کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ان ملازمین کے ریگولر ہونے تک وہ -چین سے نہیں بیٹھیں گے بعد ازاں پرنسپل شیخ زید میڈیکل کالج وہ ہسپتال پروفیسر ڈاکٹر طارق احمد نے ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے عہدیداران کو مذاکرات کے لئے بلایا

جس پر گرینڈ ہیلتھ الائنس کی طرف سے ڈاکٹر شبیر احمد وڑائچ نے نے نمائندگی کی مذاکرات نتیجہ خیز ثابت ہوئے جس پر پرنسپل شیخ زید میڈیکل کالج ہاسپٹل نے ڈیلی دیلھے ملازمین کو ہائی کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں ریگولر کرنے کے لئے سات رکنی کمیٹی تشکیل دے دی گئی

کمیٹی کے کنوینئر پروفیسر ڈاکٹر خالدپنصوتہ ممبر ڈائریکٹر فنانس کلیم اللہ مہر،ڈاکٹر شبیر وڑائچ ،محمد علی ملک ،غلام مصطفی ایڈمن آفیسر محمد جعفر آفس سپرنٹنڈنٹ لیگل ایڈوائزر خرم شامل ہیں کمیٹی کو 14 دن میں رپورٹ پیش کرنے کا حکم صادر فرمایا ہے ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن اور گرینڈ ہیلتھ الائنس کے عہدے داران نے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر طارق احمد کو خراج تحسین پیش کیا اور ان کا شکریہ ادا کیا بعد ازاں ان عہدے داران نے تمام احتجاجی ملازمین کو اپنے اپنے کام پر جانے کی ہدایت کی اس پر احتجاج ملازمین نے اپنا احتجاج ختم کردیا اور کمیٹی کے فیصلے کے انتظار تک احتجاج نہیں کیا جائے گا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »