fbpx

رحیم یارخان میں ملازمین کو ملازمتوں سے فارغ کرنے کا سلسلہ جاری

رحیم یارخان :خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے چھوٹے ملازمین کو ملازمتوں سے فارغ کرنا موجودہ حکومت کے ویژن کی نفی ہے،

عوام کو ایک کروڑ نوکریاں فراہم کرنے کے وعدے پر عمل کرنے کی بجائے ملازمین کو نوکریوں سے برخاست کرنا کہاں کا انصاف ہے، وائس چانسلر چھوٹے ملازمین کو فی الفور نوکریوں پر بحال کر کے انہیں مستقل کرنے کے احکامات جاری کریں۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلزپارٹی شہید بھٹو کی مرکزی کمیٹی کے رکن و ضلعی صدر جام اعظم انیس نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ کورونا وباء کی وجہ سے پہلے ہی عوام مسائل سے دو چار ہیں ایسے حالات میں سینکڑوں ملازمین کو نوکریوں سے برخاست کر کے ہزاروں افراد کے منہ سے روٹی کا نوالہ چھینا جا رہا ہے

جوکسی صورت قبول نہیں، وائس چانسلرآئی ٹی یونیورسٹی انسانی ہمدردی کی بنیاد پر نوکریوں سے نکالے جانے والے ملازمین کو فی الفور بحال کر کے انہیں مستقل کرنے کے احکامات جاری کریں۔

انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ کے قیام کی دعویدار حکومت کے دور میں غریب اور پسے ہوئے طبقات کے ساتھ ظلم و زیادتی قابل افسوس ہے،پاکستان پیپلزپارٹی شہید بھٹو آئی ٹی یونیورسٹی سے فارغ کئے جانے والے ملازمین کے شانہ بشانہ کھڑی ہے

اور ان کے حقوق کے حصول کے لئے ہر فورم پر آواز بلند کرے گی،روشن خیال اور انسانیت دوست طبقات نوکریوں سے برخاست کئے جانے والے ملاز مین کے حقوق کے تحفظ کے لئے آواز بلند کریں۔

انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، ہائر ایجوکیشن کمیشن اور ڈی سی رحیم یارخان سے مطالبہ کیا ہے کہ خواجہ فرید آئی ٹی یونیورسٹی سے نوکریوں سے نکالے جانے والے ملازمین کی بحالی کے لئے فوری طور پر عملی اقدامات اٹھائیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close