fbpx

من پسند ٹھیکیداروں کو نوازنے کیلئے جالسازی کا انکشاف

رحیم یار خان :ضلع کونسل ختم ہونے کے بعد تحصیل کونسلیں بن جانے پر ایڈمنسٹریٹر اور چیف افیسر تحصیل کونسل رحیم یار خان نے تقریباً 2کروڑ 50لاکھ روپے کے ٹینڈر لگوائے جس پر اکاؤنٹ نمبر 6620200035500030 پنجاب بنک کا اکاؤنٹ نمبر دیا گیا۔
اکاوئنٹ نمبر پنجاب حکومت نے ابھی تک فنگشنل ہی نہیں کیا جبکہ ایڈمنسٹریٹر تحصیل کونسل رحیم یار خان اور چیف آفیسر محمد شفیق نے ملی بھگت کرتے ہوئے ٹھیکداروں کی فیسیں پرانے اکاؤنٹس ضلع کونسل میں جمع کروانے کے لئے تحصیل آفیسر محمد شفیق اور ایکسین محمد عنصر نے  شام 6بجے کے بعد پنجاب بنک کھلوا کر ٹھیکداروں سے فیس جمع کروانے کیلئے زبردستی مجبور کیا تاکہ 22جنوری2020کو ٹینڈر ظریقہ کار مکمل ہو سکے۔
ٹھیکیداروں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے 10جنوری 2020کو ضلع کونسل کے اکاؤنٹس منجمند کر دیئے تھے اور تحصیل کونسل کے اکاؤنٹ کھول دیئے گے تھے،
پنجاب حکومت نے اگلے ہی روز نامعلوم وجوہات کی بنا پر ضلع کونسل کے اکاؤنٹس کو دوبارہ5فروری2020تک فال کردیا اور تحصیل کونسل کے نئے کھولے جانے والے اکاؤنٹس کو تاہم چالو نہ کیا گیا۔
اس کے باوجود ایکسین اور چیف آفیسر اپنا کمشن اور الاٹمنٹ کھری کرنے اورتحصیل کونسل کے کاموں کو مکمل کرنے کیلئے دوبارہ ضلع کونسل کے اکاؤنٹس میں ٹھیکداروں سے زبردستی پیسے جمع کروانے کے لئے پنجاب بنک کو رات گے کھلوایا گیا جبکہ دفتر ٹائم اور بنک ٹائم ختم ہو چکا تھا۔
ٹھیکیداروں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ زیادہ تر ٹھیکیدار واپس چلے گے ہیں اور انہوں نے اپنے من پسند ٹھیکیداروں کو نوازنے کیلئے جالسازی کی ہے۔
انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ تحسیل کونسل کے اکاؤنٹس ہی نہیں کھلے اور نہ ہی ان کے پاس فنڈ دستیاب ہیں تو کس بنیاد پر ٹینڈر جاری کیئے گے اور اخبار میں اشتہاری جاری کرتے ہوئے جلسازی ہے ان کے خلاف فوری طور پر کاروائی عمل میں لاتے ہوئے فل فور ٹینڈر منسوخ کیئے جائیں۔
 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »