محکمہ زراعت آفس کے دفتر کے باہر احتجاج

rahim yar khan Protest

رحیم یارخان: صوبائی قیادت کی کال پر فیلڈ اسسٹنٹ نے کام چھوڑتے ہوئے مطالبات کے حق میں دن بھر ضلعی آفس محکمہ زراعت آفس کے باہر احتجاجی دھرنا دیتے ہوئے ریلی نکالی اور فصلوں کی ڈیٹا انٹری کیلئے ملنے والے موبائل ٹیب واپس کردیے۔ 

فیلڈ اسسٹنٹ نے ضلع کی چاروں تحصیلوں کے محکمہ زراعت آفس کے باہر مطالبات کے حق میں احتجاجی دھرنا دیتے ہوئے ریلیاں نکالی‘ فیلڈ اسسٹنٹ ایمپلائز یونین تحصیل رحیم یارخان کی طرف سے ضلعی آفس محکمہ زراعت کے باہر احتجاجی کیمپ لگایا گیا جس میں تحصیل بھر سے فیلڈ اسسٹنٹ نے بڑی تعداد میں شرکت کرتے ہوئے اپنے مطالبات دہرائے‘ صدر فیلڈ اسسٹنٹ ایمپلائز یونین تحصیل رحیم یارخان ذیشان طارق‘ جنرل سیکرٹری عبدالغفور‘ فنانس سیکرٹری حافظ محمد نوید اور سیکرٹری اطلاعات محمد اشرف نے احتجاجی دھرنے اور ریلی میں شریک فیلڈ اسسٹنٹ سے خطاب کرتے ہوئے چھ ماہ ہونے والے نوٹیفکیشن کا اطلاق کرتے ہوئے حکومت پنجاب اور محکمہ زراعت پنجاب‘ زراعت انسپکٹر کو 6 واں سکیل اور بی ایس سی کرنے والوں کی ڈی پی سی کرکے ترقی دی جائے انہوں نے مطالبہ کیا کہ ایک سال سے غیر ادا شدہ ٹی اے ڈی اے ادا کیے جائیں اور دیگر محخموں کی ذمہ داریاں بغیر مراعات کے ٹھونسنے سے گریز کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے چھ ماہ سے موبائل ٹیب کیلئے بیلنس اور موٹر سائیکلوں کیلئے پٹرول اور مینٹی ننس الائونس نہیں دیا جارہا جس کی وجہ سے فیلڈ اسسٹنٹس کی تنخواہ‘ ماہانہ موبائل بیلنس اور موٹر سائیکلوں میں پٹرول ڈلوانے کی صورت میں صرف ہوجاتی ہے۔ انہوں نے کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا بھی مطالبہ دہرایا اور سرگودھا میں ایڈیشنل ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت کی طرف سے فیلڈ اسسٹنٹ کے بلاجواز تبادلوں پر شدید تحفظات اٹھاتے ہوئے نعرہ بازی کی۔ انہوں نے کہا 72 گھنٹوں تک سرگودھا میں فیلڈ اسسٹنٹ کے بلاجواز کیے جانے والے تبادلوں کو نہ لیا گیا تو احتجاج کا دائرہ کار ملک گیر کرتے ہوئے صوبائی اسمبلی کے باہر دھرنا دیا جائے گا اور محکمہ زراعت فیلڈ اسسٹنٹس کی مراعات بحال نہیں ہوتی اور مطالبات پورے نہیں ہوتے دھرنا اور ریلیاں جاری رہیں گی۔

rahim yar khan Protest

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »