fbpx

رحیم یارخان میں سیلاب کی تیاریوں کی منصوبہ بندی

ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر عبدالستاربابر کی سربراہی میں ریسکیو ماہانہ اجلاس میں سیلاب کی تیاریوں کی منصوبہ بندی کاجائزہ لیاگیا۔
 
ریسکیو 1122رحیم یارخان آفس میں ماہانہ ایمرجنسی اجلاس کا انعقاد ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسرڈاکٹر عبدالستار بابر کی زیر صدارت ہوا۔
جس میں ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر عادل رحمان،کنٹرول روم انچارج شہباز نادر ،سینئراکاﺅنٹنٹ مدثرعباس،ٹرانسپورٹ مینٹیننس انسپکٹرخالد محمود،اسٹیشن کوارڈینیٹر شہزادہ محمد اقبال،ایس آئی یونس سعیدی،میڈیا کوارڈینیٹرعدنان شبیراوردیگرافسران نے شرکت کی۔
ایمرجنسی آفیسرڈاکٹرعادل رحمان نے ضلع کی چاروں تحصیلوں میں سیلاب سانحہ کے حوالے سے پیشگی تیاریوں پربریفنگ دی۔
جس میں ہر تحصیل کو موجودہ دور میں پیش آنے والے سانحات خاص طورپر سیلاب کے خطرات،
ان سے نمٹنے کی تیاریوں،دیگرمتعلقہ اداروں کے پاس جدید آلات کی موجودگی اور ضروریات،سانحات سے پہلے منظم منصوبہ بندی،
تمام اداروں کی مشترکہ مشقیں،ہر ادارے کو اہم ٹاسک کا تعین،سانحات رونما ہونے پر آپریشنز،کیمپوں کا قیام،
لوگوں کو ریسکیو کرنا،میڈیکل کی سہولیات،رضاکاروں کا کام،فلاحی اداروں کا کردار،تمام سیفٹی اور فلڈفائٹنگ آلات کے آپریشنل ہونے کا جائزہ،ریلیف کے کام کا جامع پلان بتایا گیا۔
ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر عبدالستار بابر نے ممکنہ سیلاب سے پہلے ضلع کی چاروں تحصیلوں کی طرف سے کی جانے والی تیاریوں کے پہلے مرحلے کی تکمیل کے بعد دوسرے مرحلے کے لیے مشقوں کے انعقاد کے لیے ضلعی انتظامیہ کی زیرنگرانی،
ڈسٹرکٹ ڈزاسٹرمنیجمنٹ اتھارٹی کے تحت کام کرنے والے تمام اداروں اور پنجاب ڈزاسٹرمنیجمنٹ اتھارٹی کے نمائندوں کی شرکت کے ساتھ سالانہ فلڈڈزاسٹرہینڈلنگ پیشگی فرضی مشقوں کے انعقاد کی حتمی تاریخ 22اپریل کی صبح 10بجے امین گڑھ نہرپرسرانجام دی جائیں گی۔
اس حوالے سے ریسکیوافسران کوہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ مشقوں کے مقام کی نشاندہی،کیمپوں میں اضافہ،
تمام شعبوں کے ریسکیورز کی شرکت،آپریشنل کشتیوں میں اضافہ،تمام ریسکیوبوٹس پر پاکستانی پرچم کی تنصیب،ڈوبنے والے فرضی مریض کو نکالنے ،مصنوعی طریق کار سی پی آرسے سانس کی بحالی اور طبی امداد فراہم کرنے ،منظم انداز میں بوٹس پر موجود ریسکیورز کی طرف سے مہمانِ خصوصی کو سلامی،ریسکیو بوٹس کی منظم ترتیب سے ہینڈلنگ ،گہرے پانی میں پھنسے افرادکا انخلا،دیگر اداروں کی طرف سے الگ الگ کیمپوں کا قیام اور انکی طرف سے دوران فلڈ کی جانے والی سرگرمیوں کے مظاہرے شامل ہوں۔
 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close