اوباڑو پولیس کا آپریشن ،جرائم پیشہ جعلی صحافی پکڑے گئے

 اوباڑو کے نواحی علاقے چوک ماڑی  میں پولیس کا کچی شراب بنانے  والوں کے خلاف گرینڈ آپریشن ایک درجن سے زائد بھٹیوں کو مسمار کر کے ہزاروں لیٹر شراب برآمد ایک اشتہاری ملزم سمیت چھ ملزمان کو گرفتار کر کے قبضے سے نقدی موبائل فون اور 4 مختلف چینلوں کے مائک لوگو برآمد کر لئے گئے منشیات فروشوں کے مکمل خاتمہ تک آپریشن جاری رہے گا، اے ایس پی گھوٹکی ڈاکٹر ایاز حسین کی اوباڑو تھانہ پر پریس کانفرنس
اوباڑو کے نواحی علاقے چوک ماڑی کے گاوں قادر بخش رند میں منشیات فروشوں کے خلاف اے ایس پی گھوٹکی ایاز حسین کی سربراہی میں کچی شراب کی بنانے والوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کیا گیا جس میں میرپورماتھیلو، ڈہرکی، ریتی، اوباڑو سمیت ایک سو پولیس اہلکاروں نے حصہ لیا پولیس آپریش کے دوران کرین کی مدد سے ایک درجن سے زائد شراب بنانے والی بھٹیوں کو مسمار کر کے زمین میں چھپائے گئے کچی شراب کے 22 ڈرموں سے ہزاروں لیٹر شراب برآمد کر کے چھ ملزمان صدیق رند، راشد علی رند، ارشد علی رند، شمن علی رند، نادر رند اور اشتہاری ملزم بخت علی رند کو حراست میں لے لیا گیا
اس موقع پر اے ایس پی گھوٹکی ڈاکٹر ایاز حسین نے اوباڑو تھانہ پر ایس ایچ او منصور احمد حطار کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ اوباڑو کے نواحی علاقے چوک ماڑی میں گذشتہ 20 سالوں سے گھروں کے اندر کچی شراب بنانے والی فیکٹریاں قائم کی گئی تھی جنہیں آج پولیس آپریشن کے بعد مسمار کر دیا گیا ہے اے ایس پی نے کہا کہ برآمد کی گئی کچی شراب شراب ضلع گھوٹکی اور پنجاب شہر کے ضلع رحیم یارخان میں سپلائی کی جاتی رہی ہے پولیس آپریشن کے دوران گرفتار کئے گئے
ملزمان نے انکشاف کیا کہ بھٹیوں پر تیار کی جانے والی شراب عید کے موقع پر اوباڑو، ڈہرکی، گھوٹکی، پنجاب صادق آباد رحیم یارخان کو سپلائی کی جانی تھی جبکہ کاروائی کے دوران شراب بنانے والے ملزمان کے قبضے سے نقدی اور 3 موبائل فونز سمیت 4 مختلف چینلوں سے لوگو بھی برآمد ہوئے ہیں جو میڈیا کا سہارا لیکر عوام اور پولیس کو بلیک میل کرتے تھے اے ایس پی نے کہا کہ منشیات فروشوں کے مکمل خاتمہ تک آپریشن جاری رہے گا گرفتار کئے گئے ملزمان کے خلاف منشیات ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »