رحیم یارخانضلعی انتظامیہ

گندم خریداری مہم کے سلسلہ میں تمام تر انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں,ڈی سی

Task Force Rahim yar kha news

رحیم یار خان:ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل کی زیر صدارت ضلعی مشاورتی کمیٹی و ٹاسک فورس برائے زراعت کا اجلاس ۔جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین، اسسٹنٹ کمشنر صادق آباد کاشف ڈوگر، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت راؤ اشفاق احمد، پیسٹی سائیڈ کمپنی کے نمائندگان، کھاد و زرعی ادویات ڈیلرز ، کسان تنظیموں کے نمائندگان جام ایم ڈی گانگا، اللہ نوا ز مانک، حاجی ریاض چیمہ،چوہدری جمیل ناصر،حاجی احمد ستار لاڑ، پولیس، پراسیکیوشن سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔ڈپٹی کمشنر نے ہدایت کی کہ زیادہ سے زیادہ کسانوں کو قرضہ فراہم کرنے کے لئے محکمہ زراعت اور زرعی ترقیاتی بینک بھر پور تشہیری مہم چلائیں ، کسانوں کو قرضوں کا حصول آسان بنانے کے لئے اقدامات کریں جبکہ زرعی ترقیاتی بینک اور محکمہ زراعت مشترکہ طور پر کسانوں کی میٹنگ وسیمینارز کا انعقاد کرکے انہیں قرضوں بارے حکومتی پالیسیوں سے آگاہ کریں تاکہ وہ بلا سود قرضوں کے حصول سے مستفید ہو سکیں اور نجی سطح پر قرضے لینے سے اجتناب کرتے ہوئے اپنی فصلوں کے منافع میں 30 تا40فیصد اخراجات کی بچت کر سکیں۔انہوں نے ہدایت کی کہ محکمہ زراعت آئندہ ٹاسک فورس اور مشاورتی کمیٹی کے اجلاس علیحدہ اوقات کارمیں منعقد کرے اور دونوں فورمز کو فعال و نتیجہ خیز بنانے کے لئے ترقی پسند کاشتکاروں کو نمائندگی دی جائے۔انہوں نے کہا کہ آئندہ مشاورتی اجلاس میں آئندہ آنے والی فصلوں اور درپیش مسائل سے نمٹنے کے لئے تمام ممبران تحریری طور پر اپنی تجاویز جمع کرائیں گے ۔انہوں نے محکمہ انہار کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ تمام کاشتکاروں کو نہری پانی کی فراہمی کے حوالہ سے آگاہ رکھیں گے جبکہ نہروں میں پانی چھوڑنے سے قبل متعلقہ نہروں کا وزٹ کرکے حفاظتی پشتوں کو محفوظ بنایا جائے آئندہ نہروں میں پانی آنے سے کنارے ٹوٹنے کے واقعات پر محکمہ انہار کے افسران ذمہ دار ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ نہروں کے پشتوں کو محفوظ کرنے اور بھل صفائی کے لئے محکمہ انہار کے پاس فنڈز دستیاب ہیں ۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ گندم خریداری مہم کے سلسلہ میں تمام تر انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں اور تمام گندم خریداری مراکز، اسسٹنٹ کمشنر ، محکمہ زراعت، اراضی ریکارڈ سنٹرز پر گرداری فہرستیں آویزاں کر دی گئی ہیں۔ا نہوں نے کہا کہ اگر کسی کاشتکار کی گرداری فہرستوں پر اعتراضات ہیں تو وہ متعلقہ اسسٹنٹ کمشنرز کے دفتر سے رجوع کر سکتا ہے بعد میں کوئی عذر قبول نہیں کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ضلع کی آبادی اور رقبہ کے تناسب سے صوبائی سطح پر گندم کوٹا بڑھانے کی کوششیں کی جا رہی ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ کسان مستفید ہو سکیں اور8تا15اپریل سے گندم خریداری کے لئے کاشتکاروں سے درخواستیں موصول کی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ لائیو سٹاک اس ضلع پہچان اور ایک بڑی معاشی سرگرمی ہے اس کی بہتری کے لئے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں اور ضلع کے تمام بڑے ٹاؤن میں سلاٹر ہاؤس قائم کئے جائیں گے جبکہ تیار شدہ سلاٹر ہاؤس کو لائیوسٹاک کے حوالے کیا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا ضلع بھر میں بغیر گاہک کی موجودگی کے مرغی ذبح کرنے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے جبکہ لائیو سٹاک کی خرید و فروخت اور فارمنگ کرنے والے افراد کو بھی سہولیات فراہم کرنے کے لئے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ زرعی ادویات، کھادوں میں ملاوٹ کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ایسے عناصر کے خلاف بھر پور کاروائی کی جائے اور عدالتوں میں کیسز کی پیشرفت مستقل بنیادوں پر کی جائے۔انہوں نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو) کو فوکل پرسن نامزد کرتے ہوئے ہدایت کی کہ وہ خود جعلی ادویات سے متعلق محکمہ زاعت اور پراسیکیوشن کی پیشرفت کا جائزہ لیں جبکہ محکمہ زراعت بلا ضرورت زرعی ادویات فروخت کرنے والوں کو تنگ نہ کرے بلکہ ٹارگٹڈ کاروائیاں کریں۔اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ دو ماہ کے دوران444ڈیلرز کو چیک کرتے ہوئے260سیمپل اکھٹے کئے گئے،246کے رزلٹ موصول14کے بقایا ہیں اور19ادویات و کھادوں کے رزلٹ ان فٹ آنے پر11کے خلاف مقدمات کے اندراج کی درخواستیں بھجوائی گئی ہیں جبکہ مجموعی طور پر26ڈیلرز کو2لاکھ24ہزار جرمانے کئے گئے ہیں۔  

Task Force Rahim yar kha news

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button