fbpx
رحیم یارخانضلعی انتظامیہ

رحیم یارخان میں 23ہزار سے زائد رضاکاران نے ٹائیگر فورس میں رجسٹریشن کرائی

رحیم یارخان : ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے ویژن پر نوجوانوں نے بڑی تعداد میں اپنی خدمات ٹائیگر فورس کے رضاکار بننے کے لئے پیش کی ہیں ۔
حکومت اور انتظامیہ ان نوجوانوں کے جذبہ حب الوطنی کی قدر کرتی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی اسٹیرنگ کمیٹی برائے ٹائیگر فورس کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔
جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر، ڈسٹرکٹ کوارڈینیٹر رانا مسعود مجید خان، ضلعی صدر پی ٹی آئی چوہدری ظفر اقبال وڑائچ، تحصیل صدر سردار حسن خان نیازی، شمیل مرزا سمیت دیگر موجو دتھے۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ حکومت نے ضلعی سطح پر اسٹیئرنگ کمیٹی برائے ٹائیگر فورس تشکیل دی ہے جس کے کنوینئر ڈپٹی کمشنرز اور ممبران میں ڈی پی او سمیت ارکان پارلیمنٹ اور سیاسی رہنما شامل ہیں۔
انہوں نے کہا کہ تحصیل سطح پر اسسٹنٹ کمشنر زکمیٹیوں کے سربراہ ہیں۔انہوں نے اجلاس میں شرکاءکو بتایا کہ ضلع میں23ہزار سے زائد رضاکاران نے ٹائیگر فورس میں رجسٹریشن کرائی اور تمام تحصیلوں میں 4ہزار ٹائیگر فورس کے جوان انتظامیہ کے ساتھ رابطہ میں رہتے ہوئے مختلف خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ اسٹیئرنگ کمیٹی نے ضلعی سطح پر ٹائیگر فورس کے جوانوں کو منظم اور متحرک کرنا ہے جبکہ ضلعی سطح پر کئے گئے فیصلوں کو تحصیلوں میں عملدرآمد کرایا جائے گا
جس کے لئے اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ تحصیل سطح پر ٹائیگر فورس کے نوجوانوں اور کمیٹی ممبران سے قریبی رابطہ میں رہتے ہوئے مہینے میں دو بار تحصیل کمیٹی کا اجلاس منعقد کریں۔
ڈسٹرکٹ کوارڈینیٹر رانا مسعود مجید نے ڈپٹی کمشنر علی شہزا دکی جانب سے ٹائیگر فورس کے لئے تشکیل دی جانے والی حکمت عملی کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ اور تمام پارٹی ورکز ٹائیگر فورس کو وسیع تر عوامی مفاد اور فلاحی کاموں میں حصہ لینے کے لئے منظم کریں گے
تاکہ بہتر انداز سے عوامی خدمت اور حکومتی اقدامات کے ثمرات عوام تک پہنچ سکیں۔ضلعی صدر پی ٹی آئی چوہدری ظفر اقبال وڑائچ نے کہا کہ ٹائیگر فورس کو وارڈ سطح پر منظم کیا جا رہا ہے اور باہمی مشاورت سے اسے مزید بہتر کیا جائے گا۔اجلاس میں ٹائیگر فورس کے نوجوانوں کی شناخت کے لئے مخصوص ماسک، ٹی شرٹ اور کیپ کے استعمال پر بھی مشاورت کی گئی۔
 ٹڈی دل کے خلاف ضلعی انتظامیہ
ٹڈی دل کے خلاف ضلعی انتظامیہ
رحیم یار خان :ضلع میں مختلف نزدیکی اضلاع سے داخل ہونے والی ٹڈی دل کے خلاف ضلعی انتظامیہ کی متعلقہ محکموں کے ہمراہ بھر پور انسدادی کارروائی۔150ہیکٹر پر سپرے کرتے ہوئے ٹڈی دل کا خاتمہ کر دیا گیا۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد بھی رات گئے تک ٹڈی دل کے خلاف کاری انسدادی کارروائیوں کی نگرانی کرتے رہے جبکہ تحصیلوں میں اسسٹنٹ کمشنرز نے انسدادی کارروائیوں کی مانیٹرنگ کی۔ڈپٹی کمشنر علی شہزا دنے اس موقع پرگفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ضلعی انتظامیہ نے ٹڈی دل کی سرویلنس اور کمبٹ اپریشن کے لئے موثر حکمت عملی تیا رکی ہے ضلع بھر میں مواضعات کی سطح پر سرویلنس او رکمبٹ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیںجو ضلع کے کسی بھی مقام پر ٹڈی دل کے رپورٹ ہونے کی فوری اطلاع ضلعی کنٹرول روم اور متعلقہ افسران کو دیں گی جبکہ ٹڈی دل کے غول جب کسی بھی مقام پر فصلوں کو نقصان پہنچانے کے لئے بیٹھیں گے تو فیلڈ ٹیمیں فوری حرکت میں آئیں گی اور کمبٹ اپریشن شروع کر دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ مواضعات سطح پر تشکیل دی جانے والی ٹیموں کے علاوہ، پاک آرمی، رینجرز، پولیس بھی ہماری ٹیم کا حصہ ہے اور مشترکہ کوششوں سے ہم نے اس قدرتی آفت سے نمٹنا ہے۔ڈپٹی کمشنر نے بتایا کہ رحیم یار خان کی تین تحصیلوں صادق آباد، رحیم یار خان اور خانپور میں ٹڈی دل رپورٹ ہوئی اور ان تمام تحصیلوں میں کمبٹ اپریشن تمام رات جاری رہا۔
بین المذاہب ہم آہنگی
بین المذاہب ہم آہنگی
ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا ہے کہ اسلام ہمیں احترام انسانیت، امن، صبرو تحمل اور بھائی چارے کا درس دیتا ہے۔بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے ہمیں مذہبی رواداری اور اخوت کو فروغ دینا ہو گا ۔خوش آئند بات کے کہ اس ضلع نے بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے ” میثاق رحیم یار خان“ جیسا عہد نامہ تیار کیا جس پر تمام مذاہب اور مسالک کا مکمل اتفاق ہے اور انشاءاللہ ہم قیام امن اور مذہبی رواداری کے فروغ کے لئے اس کا بھر پور استعمال جاری رکھیں گے۔انہوں نے یہ بات ضلعی کمیٹی برائے بین المذاہب ہم آہنگی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی جس میں اسسٹنٹ کمشنر(ایچ آر) ریاست علی، ڈی ایس پی جاوید جتوئی، انچارج سیکورٹی حسن اقبال، علامہ عبدالروف ربانی، ریاض احمد نوری ، خواجہ محمد ادریس، بابر زمان، مرتضی حیدر، گرو سکھ دیو جی، پیٹر جان بھیل، بھیا رام انجم، عمانوئیل عامی، فرحان عامر و دیگر موجود تھے۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ اتحاد اور اتفاق کی مثالی فضا پائیدار امن کی ضمانت ہے اور مجھے خوشی ہے کہ اس ضلع کے ممبران امن کمیٹی سمیت بین المذاہب اور اقلیتی کمیٹی کے ممبران اپنے فرائض بخوبی سر انجام دے رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ دوسروں کے مذہبی جذبات کے احترام اور رواداری کی بدولت انتشار پیدا نہیں ہو سکتا اور اس ضلع کے تمام اکابرین امن کے داعی ہیں جس کی بدولت مذہبی ہم آہنگی کی فضا مثالی ہے۔انہوں نے کہا کہ اجلاس میں اقلیتی برادری نے جن مسائل کی نشاندہی کی ہے اسے ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔اجلاس سے علامہ عبدالروف ربانی، خواجہ محمد ادریس، ریاض احمد نوری، بابر زمان، مرتضی حیدر، فرحان عامر، پیٹر جان بھیل ، بھیا رام انجم، عمانوئیل عامی سمیت دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے باہمی اتحاد، اخوت و یگانگت کی بدولت دشمن ہمیں نقصان
 نہیں پہنچا سکتا۔ پاکستان ہمارا وطن ہے اور اس کی حفاظت ہمیں اپنی جانوں سے زیادہ عزیز ہے۔انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ نے موہن بھگت اور کرشن لعل بھیل کو سول ایوارڈ کے لئے نامزدگی پر ہم ضلعی انتظامیہ کے مشکور ہیں کہ انہوں نے اس دھرتی کا نام ملکی وبین الاقوامی سطح پر روشن کرنے والے ہیروز کو فراموش نہیں کیا ۔انہوں نے مختلف نوعیت کے مسائل کی بھی نشاندہی کی۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close