سسرالیوں کے تشدد سے جابحق نوجوان کو انصاف نہ مل سکا

Torture Story

رحیم یار خان(واٹس ایپ ڈیسک) ساجد محمود ولد عبدالغفور موضع خیر پور کا نوجوان مرتے وقت تک اپنے لئے انصاف کی دہائی دیتا رہا مگر آج تک پولیس اور قتل جیسے جرائم کیلئے علیحدہ سے بنایا جانے والا ہیومی سائیڈ سیل سمیت اسلام آباد سپریم کورٹ، اسلام آباد پریس کلب سمیت وزیر اعظم شکایات سیل میں اس کی باز گشت کسی نے نہ سنی۔!

Torture Story
Torture Story

10 مئی 2018 صبح 2:15 بجے ساجد محمود اپنی روٹھی ہوئی بیوی کو منانے اور اپنی دو معصوم بچیوں کو لینے (جنہیں آج تک نہ پتا چلا کہ ان کا باپ کس بے دردی و ظلم کیساتھ موت کی وادی کے سپرد کیا گیا) اپنے سسرال واقع قمر آباد ائیر پورٹ روڈ گیا جہاں معمولی تکرار پر اسے اسکے سالوں اعجاز  احمد، نیاز احمد، ارشاد احمد اور سسر عبدالرزاق نے بے جا تشدد کے بعد پیٹرول چھڑ ک کر آگ لگا دی جس سے ساجد محمود 80% جھلس گیا

Torture Story
Torture Story

اس دوران پڑوس سے شوروواویلا پر 1122 کو کال کی گئی جہاں سے بری طرح جھلسے ہوئے معصوم انسان کو اس وقت کے SHO تھانہ "بی” ڈویثرن اسلم خان اپنی موجودگی میں لیکر ہسپتال ایمر جنسی لائے جہاں نام نہاد (جعلی صحافی) نے اپنے آپ کو نجی چینل کا نمائندہ ظاہر کرتے ہوئے غریب جھلسے ہوئے انسان کا نزعی بیان کیمرے میں ریکارڈ کیا جو کہ آج بھی پولیس ہیومی سائیڈ سیل کے ریکارڈ کا حصہ ہے مگر بد قسمتی سے مقتول کے لواحقین کے اسلام آباد پریس کلب سے لیکر ایوان بالا کی سڑکوں پر احتجاجی کیمپ لگانے کے باوجود آج تک FIR میں نامزد ملزمان بغیر ضمانت دندناتے پھرتے نظر آتے ہیں، اسکے علاوہ مذکورہ مقدمہ کے تفتیشی SI  نے مقتول کے والد سے مبینہ طور پر مبلغ 80 ہزار روپے بطور رشوت طلب کی جبکہ مبلغ 40 ہزار  بھی وصول کی اور دلاسہ دیا کہ اس رقم کے بدلے تمہارے بچے کے قاتلوں کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دلاوں گاں مگر باوجود مطلوبہ رقم وصول کرنے کے کوئی کاروائی نہ کی اور اپنی محکمانہ بے حسی کا بھرپور مظاہرہ کیا جس پر مقتول کے والد نے اینٹی کرپشن سے لیکر IG، DIG تک کے دروازے کھڑکھڑائے مگر آج تک اس مظلوم باپ کی فریاد سننے کو کوئی بے حس  افسران بالا سے لیکر کوئی اعلی حکومتی عہدیدار بھی سننے کو تیار نہیں۔!

Torture Story
Torture Story

Torture Story

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »