fbpx

رحیم یارخان: عباسیہ ٹاون میں گھریلو ملازمہ پر تشدد و جنسی زیادتی سر کے بال مونڈہ دیئے، ڈی پی او کا نوٹس

گھریلو ملازمہ پر تشدد سر کے بال مونڈہ دیئے ڈی پی او کا نوٹس

رحیم یار خان : گھریلو ملازمہ پر تشدد اور سر بال مونڈھنے پر پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے تین ملزمہ کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ۔

متاثرہ لطیفاں بی بی نے ناہید ، شازیہ اور نادیہ پر دو سال تک حبس بے جا میں رکھ کر جنسی زیادتی کروانے اور مزاحمت پر تشدد اور سر مونڈھنے کا الزام عائد کیا تھا

پولیس نے لطیفاں بی بی کے بیان پر مقدمہ نمبر 347/20 درج کر کے تینوں نامزد خواتین کو گرفتار کر کے چالان جیل کر دیا

مدعی مقدمہ لطیفاں بی بی نے بتایا کہ وہ عباسہ ٹاون میں ناہید زوجہ مولوی اکرم کے گھر بطور گھویلو ملازمہ کام کر تی تھی ناہید مجھے حبس بے جا میں رکھ کر مختلف لوگوں سے پیسے پکڑ کر میرے ساتھ زیادتی کرواتی اور انکار پر بدترین تشدد کا نشانہ بناتی،
22مئی کو ناہید ایک شخص کو گھر لے کر آئی اور میرے ساتھ زیادتی کروانے کی کوشش کی میرے انکار پر ناہید ،شازیہ اور نادیہ نے مجھے بدترین تشدد کانشانہ بنایا ،اور سر کے بال کاٹ دیئے ،

موقع ملا تو میں وہاں سے بھاگ نکلی اور کچھ لوگوں نے مجھے پولیس کے پاس پیش کیا جس پر میں پولیس تھانہ سی ڈویژن نے کاروائی کرتے ہوئے تین خواتین ملزمہ کو حراست میں لے کر ان کے خلاف مقدمہ درج کر تے ہوئے قانونی کاروائی شروع کردی

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close