fbpx

واپڈا ملازمین نے ایف آئی اے عملہ کو یرغمال بنائے جانے سے انکار کر دیا

رحیم یار خان :گزشتہ روز واپڈا آفس میں ایف آئی اے کا لائن مین طالب حسین کو گرفتار کرنے کے دوران آل پاکستان واپڈاہائیڈو ورکر یونین پاکستان کا ایف آئی اے انسپکٹر سے گرفتار کا ثابیوت مانگنے پر تو تکرار ہوئی تھی ، نہ ہی کسی ایف آئی اے اہلکار کو یرغمال بنایا اور نہ ہی ایف آئی اے ٹیم کو گرفتاری سے روکا ۔ ایف آئی اے عملے کو یرغمال بنانے کی خبریں بے بنیاد ہیں ۔
ان خیالات کا اظہار کا اظہارآل پاکستان واپڈاہائیڈو ورکر یونین پاکستان کے ڈویژنل چیئرمین ریاض الحسن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ۔
انہوں نے کہا کہ میٹر ریڈر طالب حسین ان کی یونین کا جنرل سیکرٹری ہے اور گزشتہ روز ایف آئی اے کی ٹیم جس کو کمانڈ انسپکٹر جمیل کر رہا تھا نے طالب حسین کو گرفتار کیا
جس پر یونین کی ٹیم اکٹھی ہو گئی اور ایف آئی اے اہلکاروں سے پوچھا کہ گرفتار کی وجہ بیان کریں یا کوئی گرفتار کے کا غذات دیکھا دیں

جس پر ایف آئی اے اہلکاروں سے تکرار ہو گئی اور اسی دوران ایف آئی اے کی ٹیم کے ہمراہ ایکسین کے کمرے میں جا کر وجہ بتائی تو ایف آئی اے کے انسپکٹر جمیل نے موبائل پر طالب حسین کے خلاف غیر قانونی اثاثہ جات کی درج ایف آئی آر دیکھائی جس پر ایکسین کے حکم پر طالب حسین کو ایف آئی اے کے ہمراہ گرفتار کر کے جانے دیا گیا ۔
انہوں نے بتایا کہ نہ ہی انہوں نے ایف آئی اے عملہ کے ساتھ کسی قسم کی بد تمیزی کی ہے اور نہ ہی ایف آئی اے کے عملہ کو یرغمال بنایا ہے ۔
واپڈا یونین کے خلاف بے بنیاد الزام لگا کر میڈیا پر من گھرت خبریں چلائی گئی ہیں جن سے ان کا کوئی تعلق نہ ہے ۔
اس موقع پر یونین کے عہداران شبیر احمد، شہباز علی ،وائس چیر مین منور یاسین ،ڈویژنل سیکرٹری نثار احمد و دیگر موجود تھے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close