fbpx

خواتین کو پیسے دے کر نعرے لگوانا اور نچوانا کیا یہی امداد دینے کا طریقہ ہے،نسرین ریاض

رحیم یار خان:سیاسی و سماجی خواتین رہنماوں نے سروے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کے اس وقت پوری دنیا کرونا وائرس کی لپیٹ میں اور پاکستان میں یہ صورتحال شدت اختیار کر چکی ہے۔

لوگوں کی تھوڑی سی لاپروائی ان کے اپنے ہی خاندانوں کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کی ضلعی رہنما خالدہ مغل نے کہا کے پاکستان میں کرونا وائرس کا پھیلاو حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ہوا ہے اگر بروقت مناسب انتظامات کیے جاتے تو اتنی جانوں کا  ضیاع نہ ہوتا۔

اب بھی عوام خود اپنی اور اپنے خاندان کو اس وباء سے بچانے کے لیے حفاظتی انتظامات کریں تو اس مرض سے بچا جا سکتا ہے۔

[wp_show_posts id=”15210″]

انہوں نے مزید کہا کے حکومت نے آج تک جو اعلانات کیے ہیں سارے جھوٹے نکلے لاک ڈوان کے متاثرین کے لیے جو امدادی اعلان کیے کسی پر عمل نہیں ہوا اب آنے والے بجلی کے بلوں نے عوام کی چیخیں نکلوادیں ہیں۔

پی ٹی آئی کی سابق ضلعی صدر نوشین طارق نے کہا کے حکومت نے ہر ممکنہ حدتک اس موزی وباء سے ہونے والے نقصانات کو کم کرنے کی کوشش کی ہے۔

مگر عوام نے مذاق سمجھا اور مختلف افواہیں پھلا کر حکومت کے خلاف پروپکنڈہ کیا ایس او پیز پر عمل نہ کرنے کا نتیجہ یہی نکلا کہ آج ہر گلی محلے سے جنازے اُٹھ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کے ابھی بھی وقت ہے عوام ایس او پیز پرعمل کر کے مزید نقصان سے بچ سکتے ہیں۔

مسلم لیگ ن خواتین کی ضلعی صدر نسرین ریاض نے کہا کے عمران خان کی حکومت نے دو سالوں میں سیاسی انتقام لینے کے علاوہ کیا کیا ہے

عوام کرونا کے ساتھ ساتھ بے روزگاری کے باعث بھوک سے مر رہے ہیں غریب عوام کو 12 ہزار کی امداد کے بدلے میں ذلیل کیا جارہا ہے

خواتین کو پیسے دے کر نعرے لگوانا اور نچوانا کیا یہی امداد دینے کا طریقہ ہے حکومت ہر میدان میں ناکام ہوچکی ہے اب مزید عوام کوذلیل نہ کیا جائے۔

سماجی رہنما  رخسانہ مبارک نے کہا کے مشکل کی اس گھڑی میں عوام کو یکجہتی کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور عوام کسی بھی مخالف پروپکنڈے کا حصہ نا بنیں اور کرونا وائرس سے بچاو کے لیے ایس او پیز پر مکمل عملدرامد کو یقینی بنائیں۔اس کے لیے حکومت کے ساتھ ساتھ سماجی تنظیمیں بھی عوام کو اس موزی وباء سے بچنے کے لیے آگاہی مہم چلائیں تاکہ شہری اس پر عمل پیرا ہو کر نقصانات سے بچ سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »