fbpx

سوشل میڈیا نوجوانوں کو ڈپریشن کا شکار بنانے میں پیش پیش

رحیم یارخان :ماہرین صحت نے سوشل میڈیا کا بڑھتا ہوا استعمال نوجوانوں میں ڈپریشن کو بڑھانے کا سبب قرار دے دیا۔

 کئی سالوں سے نوجوانوں میں ڈپریشن اور ذہنی صحت کے مسائل کی ایک وجہ موبائل فون کا بے جا استعمال قرار دیا جاتاہے ، تاہم حالیہ تحقیق نے اس بات کی تصدیق کی ہے ۔ مونٹریال سینٹ جسٹن ہسپتال کے ماہرین نے ایک تحقیق کے ذریعے ثابت کیا ہے نوجوانوں میں ٹی وی اور سوشل میڈیا کابڑھتا ہوا استعمال ذہنی دباؤکی وجہ بن رہاہے۔
تحقیق کے مطابق ڈیجیٹل میڈیا پر زیادہ وقت گزارنے سے ایک سال میں ڈپریشن کی علامات ظاہر ہونا شروع ہوجاتی ہیں ۔ محققین کی ٹیم نے چارہزار کینیڈین نوجوانوں سے معلومات اکٹھا کیں جن کی اوسط عمریں بارہ سے سولہ سال کے درمیان تھیں۔ ان نوجوانوں سے یہ سوال کیا گیا کہ وہ ایک دن میں ڈیجیٹل سکرینزیعنی سوشل میڈیا ٹیلی ویژن ، ویڈیو گیمز اورکمپیوٹر پرکتنا وقت گزارتے ہیں ؟

تحقیق میں ثابت ہوا کہ نوجوان جتنا وقت سکرینز کو دےتے ہیں ان میں ڈپریشن بڑھنے کے چانسزبھی بڑھ جاتے ہیں ۔اگرچہ ویڈیو گیمزکو ان علامات میں شامل نہیں کیا گیا جو ڈپریشن کاسبب بنتے ہیں پائی گئیں، تاہم ماہرین نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ سوشل میڈیا کا بے دریغ استعمال نوجوان نسل کو دن بدن ڈپریشن کی جانب دھکیل رہا ہے ، مگر اس کے ساتھ ہی ماہرین ڈپریشن کی وجہ بننے والے دیگر عناصر کو بھی تلاش کر رہے ہیں۔ 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »
Close
Close