رحیم یارخان میں جعلی صحافی بن کر افسران کو بلیک میل کرنے والا پولیس حراست میں

رحیم یار خان : تھانہ اے ڈویژن پولیس کی کارروائی جعلی صحافی بن کر پولیس کا زبردستی ویڈیو  بیان لینے اور پولیس کا موبائل چوری کرنے والوں کو گرفتار کر لیا
ملزم عرصہ درز سے سوشل میڈیا پر جعلی اکاؤنٹ بناکر شہریوں کوبلیک میل کرکے رقم بٹورنے جیسے دھندے  میں ملوث تھے

پولیس نے  مقدمہ درج کرکے ملزم کوحوالات منتقل کردیا

 تھانہ سٹی اے ڈویژن میں تعینات اسسٹنٹ سب انسپکٹر نوید اقبال  نے اپنی تحریری شکایت میں بیان کیا کہ وہ پکار 15 کی کال پر مدینہ ٹاؤن کے علاقہ میں چوری کی واردات کی تحقیق کیلئے پہنچا تو وہاں پر موجود 4 ملزمان جو اسٹینڈ پر کیمرے لگا کر پہلے سے موجود تھے

انہوں واردات بارے زبردستی موقف لینے کی کوشش کی جن کو بتایا گیا کہ ہمارا ترجمان ڈسٹرکٹ پولیس آفس میں موجود ہے آپ ان سے رابط کر کے موقف لے لیں ہم ویڈیو بیان نہیں دے سکتے

جو بار بار بیان لینے کی زبردستی کرتے رہے اور اپنے آپ کو میڈیا رپورٹر اور پریس کلب کا ممبر کہتے رہے

جن کو کارڈ دیکھنے کا کہا گیا تو وہ نہ دیکھا سکے اسی دوران میرا موبائل فون گر گیا جو ان ملزمان نے اٹھا لیا

تحقیق کے بعد ان ملزمان کے نام میاں محمد ابریز سارم، عمران عمار بن اعظم اور عبداللہ کے نام سے شناخت ہوئی اور ان ملزمان نے جعلی صحافی بن کر پولیس کے کار سرکار میں مداخلت کی اور 30 ہزار روپے مالیت کا موبائل فون بھی چرا لیا

جس پر ڈی پی او رحیم یار خان نے سخت نوٹس لیتے ہوئے فوری ملزمان کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کئے اور پولیس نے ملزمان کو جدید ٹیکنالوجی کے تحت چند گھنٹوں میں گرفتار کر لیا اور مقدمہ نمبر 233/22 زیر دفعہ 419 ت پ 420 ت پ 379 ت پ 186 ت پ درج کر کے کارروائی کا آغاز کر دیا ملزمان سوشل میڈیا پر عرصہ دراز سے فرضی اور جعلی اکاونٹ بنا کر افسران سمیت شہریوں کو بلیک میل کرنے جیسے گھناؤنے دھندے میں ملوث تھے۔

اک نظر

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button