fbpx

دین اسلام نے عورتوں کو باعزت اور منفرد مقام دیا ہے،زوبیہ مدثر

international womens day

خواتین کے عالمی دن کے موقع پرانچارج دارالاما ن زوبیہ مدثر کی جانب سے دارلامان میں تقریب کا اہتمام کیا گیا
جس میں ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر چوہدری صفدر حسین وڑائچ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر چوہدری محمد افضل، یاسمین ہارون ایڈووکیٹ، پی ٹی آئی رہنما صائمہ طارق سمیت مختلف شعبہ سے تعلق رکھنے والی خواتین نے شرکت کی۔
انچارج دارلاما ن زوبیہ مدثر کا کہنا تھا کہ دین اسلام نے عورتوں کو باعزت اور منفرد مقام دیا ہے جنہیں حقوق فراہم کئے بغیر معاشرتی ترقی ممکن نہیں، قومی ترقی میں خواتین کے کردار کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا حکومت سے لیکر سماجی سطح تک خواتین کے بنیادی حقوق کی پاسداری انتہائی ضروری ہے۔
یاسمین ہارون ایڈووکیٹ اور صائمہ طارق نے کہاکہ بیٹی سے ماں سمیت ہر خواتین کو عزت و توقیر کا مقام دلائے بغیر کوئی بھی معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا خواتین ہمارے سماج کا نصف حصہ ہیں اگر آج بھی خواتین معاشرتی ناہمواریوں کی بھینٹ چڑھتی رہیں توپھر ترقی کا خواب پورا نہیں ہو گا خوش آئند بات ہے کہ موجودہ حکومت خواتین کے حقوق اور معاشرے میں انہیں مقام دلانے کے لئے سنجیدہ اقدامات کر رہی ہے۔
ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر صفدر حسین وڑائچ نے انچارج دارلامان کی جانب سے خواتین کے عالمی حقوق کے موقع پر تقریب منعقد کرانے کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ ایسی تقریبات کے انعقا د سے دارلامان میں مقیم خواتین کو اپنے حقوق سے متعلق آگہی حاصل ہو گی جس کے بہترین نتائج سامنے آئیں گے۔

اس موقع پرپاکستان تحریک انصاف کی رہنماء صائمہ طارق‘ ایڈووکیٹ یاسمین‘ مدیحہ ودیگرنے خطاب کرتے ہوئے کہا کے مذہب اسلام میں جتنی حقوق خواتین کو دئیے ہیں کسی اور مذہب میں حاصل نہیں ہیں۔اس وقت دنیا بھر میں خواتین ہر میدان میں مردو کے شانہ بشانہ نظر آتی ہیں لیکن ان کو تحفظ حاصل نہیں ہے۔21ویں صدی میں بھی گھرسے باہر نکلنے والی خواتین کو اچھی نظر سے نہیں دیکھا جاتا۔
خواتین کو تعلیم کے ساتھ ساتھ ہنر بھی حاصل کرنا ہوگا تاکہ وہ مالی طور پر مظبوط ہو کر حالات کا مقابلہ کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ ایوان میں بیٹھی ممبران کو چاہیے کے وہ خواتین کے حقوق اور مسائل کے حل کے لیے آواز اُٹھائیں موجودہ دور میں بھی خواتین کارو کاری وٹہ سٹہ جیسی رسومات کا شکار ہیں جب تک حکومت خواتین کے تحفظ کے لیے بنائے گئے قانون پر سختی سے عمل درآمد نہیں کرتی ان مسائل کا خاتمہ ممکن نہیں ہے‘ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت خواتین کے حقوق کے لیے عملی اقدامات اٹھارہی ہے‘ اس موقع پرکیک بھی کاٹاگیا۔

 

international womens day

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Translate »